کراچی میں موت دندناتی رہی ،پولیس اہلکاروں،پیش امام ،موزن سمیت دس افراد نگل گئی

کراچی میں موت دندناتی رہی ،پولیس اہلکاروں،پیش امام ،موزن سمیت دس افراد نگل ...
کراچی میں موت دندناتی رہی ،پولیس اہلکاروں،پیش امام ،موزن سمیت دس افراد نگل گئی

  


کراچی ( مانیٹرنگ ڈیسک) انسانوں کو ڈھونڈڈھونڈ کر شکار کرنے والی موت نے کراچی میں امن کی امید پیدا نہ ہونے دی اور امام مسجد، موذن اور پولیس اہلکاروں سمیت دس افراد کی دس گھنٹوں سے بھی کم وقت میں نگل لیا ۔ اورنگی ٹاؤن سیکٹر ساڑھے گیارہ میں دہشت گردوں کی فائرنگ سے نوجوان  وقار جاں بحق ہو گیا۔ جہانگیر روڈ پر دہشت گردوں نے دو بھائیوں شرافت اور مبارک علی کو نشانہ بنایا دونوں ہی زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے جاں بحق ہو گئے۔ سرجانی میں کے ڈی اے فلیٹ کے قریب فائرنگ سے صابر جاں بحق ہو گیا۔ کورنگی انڈسٹریل ایریا کے علاقے بلال کالونی میں ویٹا چورنگی کے قریب موٹر سائیکل سواروں نے فائرنگ کر کے دو پولیس کانسٹیبل عزیز اللہ اور کانسٹیبل شہزاد اختر کو شہید کر دیا اور دونوں اہلکاروں کے سرکاری رائفلز لے کر فرار ہو گئے۔ قصبہ موڑ کے قریب فائرنگ کا زخمی بھی دم توڑ گیا۔ سرجانی ٹاون تھانے کے حدود میں ناردرن بائی پاس کے قریب جھاڑیوں سے ایک شخص کی پھندا لگی لاش ملی۔ پولیس کے مطابق مقتول کو گلے میں پھندا ڈال کر قتل کیا گیا اور جیب سے ایک پرچی ملی ہے جس پر مقتول کا نام عدنان ولد حاجی اکرم اور پتہ بلوچستان کا درج ہے۔

مزید : قومی