گاڑیاں بنانے والی کمپنی کا سب سے بڑا دھوکہ پکڑا گیا

گاڑیاں بنانے والی کمپنی کا سب سے بڑا دھوکہ پکڑا گیا
گاڑیاں بنانے والی کمپنی کا سب سے بڑا دھوکہ پکڑا گیا

  


واشنگٹن (نیوز ڈیسک) اگر آپ اپنی نئی کار کے طاقتور انجن کی گرجدار آواز سن کر فخر اور خوشی سے پھول جاتے ہیں یا کسی اور کی کار کے انجن کی بارعب آواز سن کر گھبرا جاتے ہیں تو معتبر امریکی اخبار ”واشنگٹن پوسٹ“ کی اس رپورٹ پر ضرور توجہ دیں جس کے مطابق کاریں بنانے والے کسٹمرز کو دھوکا دینے کیلئے گاڑیاں میں مصنوعی آواز پیدا کرنے والے آلات نصب کررہے ہیں۔

وہ ملک جہاں قیدیوں کو کتاب پڑھنے پر جلد رہائی ملے

اخبار کہتا ہے کہ انجن کی مصنوعی آواز آٹو انڈسٹری کا غلیظ اور گھٹیا راز بن چکا ہے۔ رپورٹ کے مطابق کاریں بنانے والی کمپنیاں کہتی ہیں کہ اگرچہ کسٹمرز طاقتور اور کم توانائی خرچ کرنے والے خاموش انجنوں کو پسند کرتے ہیں لیکن اس کے ساتھ ہی یہ مسئلہ بھی ہے کہ وہ گرجدار آواز سننا بھی پسند کرتے ہیں جس کی وجہ سے مصنوعی آواز پیدا کرنے والے آلات لگائے جاتے ہیں۔ اس سے پہلے ادارے Popular Mechanics کی طرف سے بھی واضح کیا جاچکا ہے کہ گاڑیوں میں مصنوعی آواز پیدا کرنے کیلئے کئی قسم کے آلات استعمال کئے جارہے ہیں جن میں Carvell's Valve System اور Mustang کے Noise Pipesشامل ہیں جبکہ Soundaktor نامی آلہ بھی استعمال کیا جاتا ہے۔ اول الاذکر آلات تو انجن کی آواز کو بڑھا کر پیش کرتے ہیں لیکن Soundaktor ایک قدم آگے جاتے ہوئے پہلے سے ریکارڈ کی گئی مصنوعی آوازیں بھی چلاتا ہے۔ اخبار کا کہنا ہے کہ جب اس حیرت انگیز رپورٹ کی تصدیق کیلئے Volkswagon کمپنی سے رابطہ کیا گیا تو اس کے برانڈ منیجر ڈیرل ہیریسن نے کہا یہ بات غلط ہے کہ آوازیں پہلے سے ریکارڈ کر کے کار میں چلائی جاتی ہیں، البتہ انہوں نے یہ تسلیم کرلیا کہ آواز کو بڑھا چڑھا کر پیش کرنے والے آلات لگائے جاتے ہیں۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...