حریت پسند کشمیری کسی بھی صورت سرنڈر کرنے کے متحمل نہیں:نعیم خان

حریت پسند کشمیری کسی بھی صورت سرنڈر کرنے کے متحمل نہیں:نعیم خان

  

 سرینگر(کے پی آئی) نیشنل فرنٹ چیئرمین نعیم احمد خان نے کہا ہے کہ نئی دلی اور اس کے آلہ کاروں کو یہ بات دماغ میں بٹھا لینی چاہئے کہ آزادی پسند کشمیری کسی بھی صورت میں سرنڈر نہیں کریں گی۔ ایک تعزیتی مجلس سے خطاب کرتے ہوئے نعیم احمد خان نے کہاکہ آج جب بھارت اپنا یوم جمہوریہ منانے میں مصروف ہی،متنازعہ سر زمین کشمیر میں ایک اور والد (غلام احمدمیر) اپنے محبوس بیٹے کو دیکھنے کی تمنا لئے دنیا چھوڑ کر چلا گیا۔انہوں نے کہاکہ کشمیر میں اس طرح کے واقعات بھارتی جمہوریت کا منہ چڑا رہی ہیں اور سینکڑوں والدین بھارت کی سیاسی قیادت سے پوچھ رہے ہیں۔ کہ کیا اسی جمہوریت پر آپ کو فخر ہے اور کیا اسی جمہوریت کو لیکر آپ عالمی برادری کی آنکھوں میں دھول جھونکتے ہیں؟نعیم خان نے کہا کہ موصوف کا بیٹا مظفر احمد میر گذشتہ چار سا ل کے زیادہ عرصہ سے محض آزادی پسندی کی پاداش میں ایام اسیری کاٹ رہے ہیں انہوں نے کہاکہ غلام احمد میرنے اپنی آخری سانس تک اپنے بیٹے کو ایک بار دیکھنے کی تمنا کا اظہار کیا اور آخر کار وہ یہی حسرت لئے دنیا سے چلے گئی۔نعیم خان نے اس موقعہ پر مرحوم کے لواحقین سے یکجہتی کا اظہار کرتے ہوئے ان کا حوصلہ بڑھایا اور اس بات کی وضاحت کی کہ کشمیر میں ایسے سینکڑوں لوگ ہیں جو محض آزادی کی پاداش میں آہنی سلاخوں کے پیچھے زندگیاں گذار رہے ہیں جبکہ ان کے والدین ،بچے اور دیگر عزیز و اقارب ان کو دیکھنے کی تمنا میں ایام گذار رہے ہیں۔ کئی مثالیں ایسی ہیں جہاں محبوسین کے بچی،والدین اور قریبی رشتہ دار موت کی آغوش میں چلے گئے مگر جمہوریت کے پجاریوں کا انسانی جذبہ بھی نہیں ابھرا۔نعیم خان نے کہا کہ جب تک بھارت سرزمین کشمیر پر قابض ہے تب تک ایسے واقعات پیش آتے رہیں گے کیونکہ دیوانوں اور زنجیروں کا رشتہ تا صبح قیامت قائم رہنے والا ہی۔انہوں نے حاضرین کے سامنے اپنا یہ عزم دہرایا کہ مرحوم غلام احمد میرجیسے محبوسین کے صبر،شہیدوں کے گرم گرم لہو کی خوشبو اورمتاثرہ والدین کی تڑپ کو مد نظر رکھتے ہوئے اس وقت تک جد و جہدکا سلسلہ جاری رکھا جائے گا جب تک آزادی کا سورج طلوع ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ بھارت اپنے ظلم کے ترکش کے تمام تیر آزما چکا ہے اور اب بھی اگر اسے کوئی حربہ کام میں لانا ہے تو غیور آزادی پسندکشمیری اس کا مقابلہ کرنے کیلئے تیار ہیں مگر نئی دلی اور اس کے آلہ کاروں کو یہ بات دماغ میں بٹھا لینی چاہئے کہ آزادی پسند کشمیری کسی بھی صورت میں سرنڈر نہیں کریں گی۔

مزید :

عالمی منظر -