مصر‘ پولیس اور مظاہرین کی جھڑپوں میں 18ہلاک

مصر‘ پولیس اور مظاہرین کی جھڑپوں میں 18ہلاک

 قا ہر ہ(آن لائن)مصر کے مختلف علاقوں میں مظاہرین اور پولیس کے درمیان جھڑپوں میں ہلاک ہونے والوں کی تعداد کم از کم 18 ہوگئی ہے۔طبی حکام کے مطابق ہلاک شدگان میں تین پولیس اہلکار بھی شامل ہیں جبکہ درجنوں مظاہرین ان جھڑپوں میں زخمی ہوئے ہیں۔زیادہ تر ہلاکتیں قاہرہ کے مشرقی علاقوں میں ہوئی ہیں جو کالعدم جماعت اخوان المسلمین کا گڑھ ہیں۔پولیس نے 400 سے زیادہ مظاہرین کو گرفتار بھی کیا ہے۔یہ مظاہرے مصر میں اس انقلاب کی چوتھی سالگرہ کے موقع پر ہوئے جس کے نتیجے میں طویل عرصے تک ملک کر حکومت کرنے والے صدر حسنی مبارک کے اقتدار کا خاتمہ ہوا تھا۔گذشتہ برس بھی اس موقع پر درجنوں افراد ہلاک ہوئے تھے۔رواں برس انقلاب کی سالگرہ سے قبل مصر کے اہم شہروں میں سکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے تھے جبکہ دارالحکومت قاہرہ میں اہم مقامات تک عوام کی رسائی روک دی گئی تھی۔مصری وزارتِ داخلہ کا کہنا ہے کہ پولیس اہلکار قاہرہ میں مظاہروں کے دوران ہلاک ہوا جبکہ ہلاک ہونے والے مظاہرین کا تعلق قاہرہ کے علاوہ شمالی شہر اسکندریہ سے تھا۔پولیس کا کہنا ہے کہ دو شدت پسند دریائے نیل کی ڈیلٹا کے علاقے میں بم نصب کرتے ہوئے دھماکہ ہونے سے ہلاک ہوئے۔

مزید : عالمی منظر


loading...