خاتون کی اراضی پر قبضہ کی کوشش پرمتاثرین کا احتجاجی مظاہرہ

خاتون کی اراضی پر قبضہ کی کوشش پرمتاثرین کا احتجاجی مظاہرہ

 گوجرانوالہ (بیورورپورٹ) خاتون کی وراثتی اراضی پر قبضہ کی ناکام کوشش کیخلاف احتجاجی مظاہرہ‘شدید نعرے بازی ‘متاثرہ خاتون کا آر پی او گوجرانوالہ سے نوٹس لینے کا مطالبہ تفصیلات کے مطابق نواحی علاقہ بکوہل جٹاں کی رہائشی نسرین بی بی نامی خاتون کی گاؤں میں وراثتی اراضی تھی جس پر وہ فصل کاشت کرکے اپنے بچوں کا پیٹ پال رہی تھی چند روز قبل خاتون کی وراثتی اراضی پر علاقہ کے بااثر افراد ماسٹر امتیاز وغیرہ نے اپنے درجنوں ساتھیوں کے ہمراہ دھاوا بول دیا اور کاشت فصل تباہ کرکے خاتون کی وراثتی اراضی پر ناجائز قبضہ کرنے کی کوشش کی اطلاع ملنے پر خاتون اپنے اہلخانہ ودیہاتیوں کے ہمراہ موقع پر پہنچی تو ملزمان نے انہیں سنگین نتائج کی دھمکیاں دیں اور فرار ہوگئے وقوعہ کی اطلاع فوری طور پر مقامی پولیس تھانہ بولانی کو دی گئی جس نے فوری موقع پر پہنچ کر جائزہ لیا اور ملزمان ماسٹر امتیاز وغیرہ 32افراد کیخلاف مقدمہ درج کرلیا خاتون کی وراثتی اراضی پر قبضہ کی ناکام کوشش اور مقدمہ کے اندراج کے باوجود ملزمان کی عدم گرفتاری کیخلاف متاثرہ خاتون کے اہلخانہ و دیہاتیوں نے گذشتہ روز احتجاجی مظاہرہ کیا اور شدید نعرے بازی کرتے ہوئے سینہ کوبی کی مظاہرین نے بتایا کہ اراضی نسرین بی بی کو وراثت میں ملی ہے اور تقریباً دو سو سال سے ان کا خاندان جگہ کی ملکیت رکھتا ہے ملزمان نے نسرین بی بی کو اراضی کے باہمی تبادلہ کا لالچ دیکر دھاوا بول دیا اور خاتون کی وراثتی اراضی پر قبضہ کی ناکام کوشش کی مقدمہ کے اندراج کے کئی روز گزرنے کے بعد بھی پولیس کسی بھی ملزم کو گرفتار نہ کرسکی جبکہ ملزمان مدعی مقدمہ نسرین بی بی اور اسکے اہلخانہ کو سنگین نتائج کی دھمکیاں دے رہے ہیں علاقہ مکینوں نے شدید احتجاج کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف، آئی جی پنجاب ، ڈی آئی جی گوجرانوالہ، ڈی پی او گجرات ودیگر حکام سے فوری نوٹس لیتے ہوئے ملزمان کیخلاف کاروائی کا مطالبہ کیا ہے۔

مزید : علاقائی


loading...