مرَدوں اور خواتین میں زیادہ احمق کون ؟سائنسی تحقیق کے انتہائی متنازعہ نتائج

مرَدوں اور خواتین میں زیادہ احمق کون ؟سائنسی تحقیق کے انتہائی متنازعہ نتائج
مرَدوں اور خواتین میں زیادہ احمق کون ؟سائنسی تحقیق کے انتہائی متنازعہ نتائج

  

سڈنی (نیوز ڈیسک) خواتین تو یہ بات ہمیشہ سے کہہ رہی تھیں لیکن اب بدقسمتی سے سائنس نے بھی یہ کہہ دیا ہے کہ مرد احمق ہوتے ہیں اور احمق بیوقوفیاں تو کرتے ہی ہیں۔

وہ آدمی جو پیدا بونا ہوا تھا لیکن جب مرا تودیو جیسا تھا،میڈیکل سائنس کی تاریخ کی پراسرار ترین کہانی

دراصل مردوں کے احمقانہ رویے کے متعلق ایک تھیوری بھی پائی جاتی ہے جسے (MIT) Male Idiot Theory کہا جاتا ہے۔ سائنسدانوں نے اس تھیوری کو جانچنے کیلئے 1995ءسے 2014ءکے درمیان Darwin Award حاصل کرنے والے 318 لوگوں پر تحقیق کی۔ یہ ایوارڈ عظیم ترین اور نہایت پرخطر بیوقوفیاں کرنے والوں کو دیا جاتا ہے۔ مثلاً ان ایوارڈ یافتہ لوگوں میں ایک ایسا مرد شامل تھا جس نے لفٹ لینے کیلئے ایک شاپنگ ٹرالی کو ایک ریل گاڑی کے پیچھے باندھا اور اس میں بیٹھ گیا۔ دو میل تک ریل گاڑی کے پیچھے گھسٹنے کے باعث یہ شخص موت کے منہ میں چلا گیا۔ ایک دہائی کے ڈیٹا کے جائزے سے معلوم ہوا کہ غیر معمولی بیوقوفیاں کرنے والوں میں سے تقریباً 90 فیصد مرد تھے، یعنی سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ مردوں میں بلاوجہ خطرات میں پڑنے کا رویہ بہت زیادہ پایا جاتا ہے اور یہی رویہ انہیں احمق ثابت کرنے کی بنیادی وجہ ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -