دبئی میں پاکستانی نے ایسا روپ دھار کر غیر ملکی خاتون کے ساتھ جنسی زیادتی کردی کہ کوئی بھی شہری سن کر ہی گھبراجائے

دبئی میں پاکستانی نے ایسا روپ دھار کر غیر ملکی خاتون کے ساتھ جنسی زیادتی کردی ...
دبئی میں پاکستانی نے ایسا روپ دھار کر غیر ملکی خاتون کے ساتھ جنسی زیادتی کردی کہ کوئی بھی شہری سن کر ہی گھبراجائے

  

دبئی سٹی (مانیٹرنگ ڈیسک) متحدہ عرب امارات میں اچھی بھلی عزت کی نوکری کرنے والے ایک پاکستانی نوجوان نے ہوس کا غلام بن کر ایک مراکشی خاتون کی عصمت دری کر ڈالی، اور یوں نہ صرف اپنی عزت اور نوکری گنوائی بلکہ ہموطنوں کو بھی شرمندہ کر دیا۔

جواں سال مراکشی دوشیزہ نے عدالت میں بتایا کہ وہ الریقا کے علاقے میں ایک ریسٹورنٹ کے سامنے موجود تھیں کہ جب ایک ’پولیس افسر‘ نے انہیں روکا۔ خاتون نے بتایا کہ اس شخص نے اپنا تعارف سی آئی ڈی آفیسر کے طور پر کروایا اور اسے پوچھ گچھ کے لئے ساتھ چلنے کو کہا۔ متاثرہ خاتون کا کہنا تھا کہ وہ ملازمت کی تلاش میں دبئی آئی تھیں اور فیج المرار کے علاقے میں مقیم تھی۔ان کی سادہ لوحی اور مقامی حالات سے ناواقفیت کا فائدہ اٹھاتے ہوئے ملزم نے ان پر دباﺅ ڈالا اور زبردستی گاڑی میں بٹھا کر ایک رہائشی علاقے میں لے گیا۔ ملزم نے قدرے سنسان جگہ پر گاڑی کھڑی کی اور پھر خاتون کو پچھلی سیٹ پر لیجاکر زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔ متاثرہ خاتون نے بتایا کہ ملزم نے اسے زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد مین ہائی وے کا رخ کیا اور وہاں اسے ایک ٹیکسی میں سوار کرواکے رخصت کیا، لیکن اس سے پہلے موبائل فون، گھڑی اور 500 درہم چھین لئے۔

عرب نوجوان کو فیس بک پر لڑکی کی فرینڈ ریکوسٹ،قبول کی تو پھر ایسا کام ہو گیا کہ زندگی کی سب سے بڑی غلطی بن گئی،جان کر آپ کبھی بھول کر بھی یہ شرمناک کام نہ کریں گے

عدالت میں پیش کی گئی دستاویزات کے مطابق 32 سالہ ملزم ایک پولیس سٹیشن میں کلرک کے فرائض سرانجام دیتا تھا لیکن خاتون کو ہوس کا نشانہ بنانے کے لئے اس نے سی آئی ڈی افسر کا بہروپ بھرا۔ ابتدائی طور پر وہ اپنا جرم تسلیم کرنے پر تیار نہیں تھا لیکن بعدازاں سب کچھ مان لیا۔ عدالت نے اسے خاتون کے ساتھ ناجائز تعلق استوار کرنے کے جرم میں چھ ماہ قید کی سزا سنائی، جس کے بعد اسے ملک بدر کردیا جائے گا، جبکہ اسے اغواءکے الزام سے بری قرار دیا گیا۔

مزید : عرب دنیا