سارک چیمبر کے اجلاس میں شرکت کیلئے 20رکنی و فدامرتسر روانہ ہوگیا

سارک چیمبر کے اجلاس میں شرکت کیلئے 20رکنی و فدامرتسر روانہ ہوگیا

 لاہور (ا ین این آئی)سارک چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کی ایگزیکٹو کمیٹی کا 68واں اجلاس 26سے 30جنوری تک مشترکہ طور پر لاہور اور امرتسر میں منعقد ہو گا جس میں شرکت کے لئے پاکستان سے 20رکنی وفد سارک چیمبر کے نائب صدر افتخار علی ملک کی قیادت میں وفد جمعرات کو واہگہ کے راستے امرتسر روانہ ہوگیا جہاں وہ اس حوالے سے طے شدہ اجلاسوں میں شرکت کرے گا ۔سارک کے بزنس لیڈرز کا وفدجمعہ 27 جنوری کو واہگہ بارڈر کے راستے لاہور پہنچے گا، وفد اپنے دو روزہ دورہ کے دوران وزیر اعظم، گورنر پنجاب، وزیر تجارت اور فیڈریشن پاکستان چیمبرز ایف پی سی سی آئی) کے عہدیداروں کے ساتھ مفید اور بامعنی مذاکرات کرے گا۔ اس حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے سارک چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے نائب صدر افتخار علی ملک نے کہا کہ سارک تنظیم کے مقاصد کو اجاگر کرنے اور جنوبی ایشیا میں امن و استحکام کا پیغام عام کرنے کیلئے سارک چیمبر نے یہ اجلاس مشترکہ طور پر لاہور اور امرتسر میں منعقد کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جنوبی ایشیا کی پرائیویٹ سیکٹر بزنس لیڈر شپ یقین رکھتی ہے کہ سارک رکن ممالک کے درمیان علاقائی اقتصادی تعاون سے ہی خطے میں موجود حقیقی اقتصادی پوٹینشل سامنے لایا جا سکتا ہے۔ سارک چیمبر کے صدر سورج ویدیا نے اس موقع پر اپنے پیغام میں کہا ہے کہ سارک ریجن کے پسماندہ طبقات کا معیار بلند کرنے کیلئے واحد قابل عمل راستہ مشترکہ اقدامات ہیں اور ایگزیکٹو کمیٹی کا لاہور اور امرتسر میں اجلاس ان مقاصد کے حصول اور سارک ممالک کا خطے اور دنیا بھر میں مثبت تشخص اجاگر کرنے میں انتہائی معاون ہو گا۔ سارک چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کی قیادت جنوبی ایشیا میں اقتصادی تعاون کے فروغ کیلئے نجی شعبہ کے بھرپور کردار کیلئے جدوجہد کرتی رہی ہے۔

سارک چیمبر پاکستان چیپٹر کے نائب صدر افتخار علی ملک نے بتایا کہ 8 رکن ممالک کے وفود امن اور ہم آہنگی کا پیغام دیتے ہوئے واہگہ بارڈر کراس کریں گے۔ انہوں نے رکن ممالک پر زور دیا کہ وہ سارک کے مقاصد کے حصول کیلئے متحد ہو کر آگے بڑھیں کیونکہ سارک کو زیادہ موثر بنانے، اس کے بنیادی مقاصد کے حصول اور خطے میں موجود حقیقی سماجی و اقتصادی پوٹینشل سے فائدہ اٹھانے کیلئے سیاسی سطح پر بہت زیادہ عزم کی ضرورت ہے۔ افتخار علی ملک نے کہا کہ نجی شعبہ جنوبی ایشیا کے سماجی و اقتصادی ربط کیلئے پر عزم ہے، خطے کی کاروباری برادری یگانگت پر یقین رکھتی ہے اور غربت کے خاتمے اور روزگار کے مواقع سمیت درپیش چیلنجوں سے نمٹنے کیلئے اقتصادی ہم آہنگی کی حامی ہے۔

سارک چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کی ایگزیکٹو کمیٹی میٹنگ تجارت اور سرمایہ کاری سے متعلق شعور اجاگر کرنے کی غرض سے مشترکہ طور پر لاہور اور امرتسر میں 26 سے 30 جنوری تک منعقد کی جا رہی ہے۔

مزید : کامرس