غازی آبادتھانہ،ایک رات میں منشیات کے 36مقدمات درج

غازی آبادتھانہ،ایک رات میں منشیات کے 36مقدمات درج

لاہور(نامہ نگار )غازی آبادپولیس نے افسران کوخوش کرنے کی خاطرایک ہی رات میں منشیات کے 36مقدمات درج کرلئے ،ایس ایس پی ڈسپلن رانا ایاز سلیم نے جعلی کارروائی سامنے آنے پرایس ایچ اوعتیق ڈوگرسمیت 6 اہلکاروں کومعطل کردیاجبکہ سیشن عدالت نے ملزم شعیب احمدکی درخواست پرمذکورہاہلکاروں سے28جنوری کوجواب طلب کرلیا ہے۔ایڈیشنل سیشن جج رضوان الحق کی عدالت میں غازی آباد پولیس کی طرف سے ایک ہی رات میں 36ایف آئی آر درج کرنے کے ایک کیس میں ملوث ملزم شعیب احمدکی درخواست ضمانت کی سماعت ہوئی، عدالت میں ملزم کے وکیل نے 36ایف آئی آر پیش کرتے ہوئے پولیس کی کارکردگی کے حوالے سے ایس ایس پی ڈسپلن کی رپورٹ پیش کی ۔

جس میں ایس ایچ او غازی آباد عتیق ڈوگر ،اے ایس آئی عبدالخالق اور 4اہلکاروں کو مقدمات ایک ہی رات میں درج کرنے پر معطل کیا گیاتھا،وکیل صفائی نے بتایا کہ ایف آئی آر درج میں ایک ہی مضمون بنایا گیاہے کہ ملزم کالے شاپر میں منشیات لے کر جا رہا تھا ،یہ کیس جھوٹا ہے، ملزم کی ضما نت منظور کی جائے۔عدالت نے درخواست ضمانت پر پولیس اہلکاروں کو طلب کیا لیکن وہ پیش نہ ہوئے جس پر عدالت نے 28جنوری کے لئے نوٹس جاری کر تے ہوئے سماعت ملتوی کردی ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4