اسسٹنٹ فوڈ سیفٹی افسر اور عائشہ ممتاز کے سابق ڈرائیور کے جسمانی ریمانڈ میں توسیع

اسسٹنٹ فوڈ سیفٹی افسر اور عائشہ ممتاز کے سابق ڈرائیور کے جسمانی ریمانڈ میں ...

لاہور(نامہ نگار )ضلع کچہری کے جوڈیشل مجسٹریٹ نے کرپشن کے مقدمہ میں ملوث پنجاب فوڈ اتھارٹی کے اسسٹنٹ فوڈ سیفٹی افسر اور عائشہ ممتاز کے سابق ڈرائیور کے جسمانی ریمانڈ میں 2روز کی توسیع کردی ہے۔جوڈیشل مجسٹریٹ امتیاز باجوہ کے روبرو محکمہ اینٹی کرپشن کے تفتیشی افسر محمد زبیر نے پنجاب فوڈ اتھارٹی کے اسسٹنٹ فوڈ سیفٹی افسر ثمر حیات اور عائشہ ممتاز کے سابق ڈرائیور ڈرائیور محمد اشرف کو پیش کیا، تفتیشی افسر نے موقف اختیار کیا کہ ملزموں نے اپنی سرکاری حیثیت کا ناجائز استعمال کرتے ہوئے کرپشن کی اور غیر قانونی ذرائع سے رقم حاصل کی، انہوں نے عدالت کو بتایا کہ دونوں ملزم منتھلیاں بھی وصول کرتے رہے ہیں اور دوران تفتیش ملزم اشرف نے انکشاف کیا ہے کہ اس نے کرپشن کی رقم سے مکان خریدا ہے۔

، اینٹی کرپشن نے دلائل دیئے کہ ملزموں سے کرپشن کے ذرائع معلوم کرنے ہیں ،دونوں ملزموں کے جسمانی ریمانڈ میں 7روز کی توسیع کی جائے، ملزم اشرف کے وکیل نے دلائل دیئے کہ اینٹی کرپشن کا الزام بے بنیاد ہے ، پنجاب فوڈ اتھارٹی کے ڈرائیور کا مکان 20سال پہلے خریدا گیا تب ملزم سرکاری ملازم نہیں تھا ، انہوں نے مزید دلائل دیئے کہ اینٹی کرپشن نے بے بنیاد مقدمہ درج کیا ہے اور ملزموں کے حاصل کے گئے جسمانی ریمانڈ کے دوران کرپشن کے کوئی بھی ثبوت سامنے نہیں آئے ،اینٹی کرپشن کی استدعا مسترد کی جائے، عدالت نے دلائل سننے کے بعد کرپشن کے مقدمہ میں ملوث پنجاب فوڈ اتھارٹی کے اسسٹنٹ فوڈ سیفٹی افسر اور عائشہ ممتاز کے سابق ڈرائیور کو 28جنوری تک جسمانی ریمانڈ پر اینٹی کرپشن کے حوالے کر دیاہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...