اینٹی کرپشن شیخوپورہ کے چھاپے، اے ایس آئی ٹریفک و گرداور سمیت 5ملزم گرفتار

اینٹی کرپشن شیخوپورہ کے چھاپے، اے ایس آئی ٹریفک و گرداور سمیت 5ملزم گرفتار

لاہور(سپیشل رپورٹر): اینٹی کرپشن شیخوپورہ نے چھاپے مارکر اسسٹنٹ سب انسپکٹر ٹریفک پولیس اورگرداورسمیت مختلف مقدمات میں ملوث پانچ ملزمان کو گرفتار کرلیا ۔اسسٹنٹ ڈائریکٹر اینٹی کرپشن انویسٹی گیشن شیخوپورہ چوہدری محمد مقبول نے مجسٹریٹ سرور علی کے ہمراہ جناح پارک کے قریب چھاپہ مارکر مقامی شہری ادریس بھٹی سے 30ہزار روپے رشوت لیتے ہوئے اے ایس آئی ٹریفک پولیس محمد طارق کو رنگے ہاتھوں گرفتار کرلیا۔ملزم اے ایس آئی محمد طارق مدعی ادریس بھٹی سے ٹریفک پولیس میں بھرتی کرانے کیلئے رشوت کی رقم وصول کررہاتھاکہ رنگے ہاتھوں پکڑا گیا۔اینٹی کرپشن شیخوپورہ نے ممتاز بیگم بیوہ محمد یوسف کا 33لاکھ روپے مالیت کا 17مرلہ مکان جعلی کاغذات پر فروخت کرنے کے مقدمے میں ملوث علی اکبر اورعبدالخالق کو گرفتار کرلیا ۔انکوائری کے دوران ملزم عبدالخالق پر بیوہ کا مکان اونے پونے داموں خریدنے اورجعلی دستاویزات تیار کرنے جبکہ ملزم علی اکبر پر جعلسازی میں معاونت کے الزامات درست ثابت ہوئے جس پر ملزمان کے خلاف کاروائی کی گئی ۔اینٹی کرپشن شیخوپورہ نے مقامی شہری حاجی غلام صابر کی درخواست پر جعلی فرد کی بنیادپراراضی کا انتقال کرنے کے الزام میں موضع بھلے بھانیوال تحصیل فیروزوالا کے گرداور اسلم اورجعلسازی میں ملوث وارث علی کو گرفتار کرلیا ۔اینٹی کرپشن نے مقامی عدالت سے ملزمان کا جسمانی ریمانڈ حاصل کرکے تفتیش شروع کردی ہے ۔ڈائریکٹر جنرل اینٹی کرپشن پنجاب بریگیڈئیر(ریٹائرڈ) مظفر علی رانجھا نے کرپٹ سرکاری ملازمین کو خبردار کیا ہے کہ وہ اپنی روش تبدیل کریں اورعوام کی خدمت کو اپنا شعار بنائیں ۔قانون کے مطابق سرکاری معاملات کی ادائیگی کیلئے رقم کا تقاضہ ایک ناقابل معافی جرم ہے جس پر اینٹی کرپشن کاروائی کیلئے ہمہ وقت تیار ہے ۔انہوں نے واضح کیا کہ کرپٹ سرکاری ملازمین کیلئے نیا سال بہت بھاری ثابت ہوگا ۔

مزید : صفحہ آخر