اسٹریٹ کرائم میں اضافہ قابل تشویش ہے ،کامران اختر

اسٹریٹ کرائم میں اضافہ قابل تشویش ہے ،کامران اختر

کراچی (اسٹاف رپورٹر) متحدہ قومی موومنٹ (پاکستان ) کے حق پرست ارکان سندھ اسمبلی کامران اختر اور ندیم راضی نے شہر میں اسٹریٹ کرائمز کی بڑھتی ہوئی وارداتوں کی سخت ترین الفاظ میں مذمت کی ہے اور کہا ہے کہ ایسا محسوس ہورہا ہے کہ قانون نافذ کرنے والے ادارے جرائم پیشہ عناصر کو لگام دینے میں مکمل طور پر ناکام ہوچکے ہیں ۔ اپنے مشترکہ بیان میں انہوں نے کہاکہ شہر کراچی میں موبائل ، موٹر سائیکلیں ، کاریں چھیننے کی وارداتیں اور شہریوں کو اپنی جمع پونجی سے محروم کرنا روز کا معمول بن چکا ہے جس کے باعث شہریوں میں شدید عدم تحفظ پایا جاتا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ شہر میں اسٹریٹ کرائمز پر قابو پانے کیلئے قانون نافذ کرنے والے اداروں کی کوئی مثبت حکمت عملی دکھائی نہیں دے رہی ہے جبکہ اس کے بجائے قانون نافذ کرنے والے اداروں کے اہلکار روایتی طور پر سڑکوں پر اسنیپ چیکنگ کرتے تودکھائی دیتے ہیں مگر اسٹریٹ کرائمز اور دیگر وارداتوں میں ملوث جرائم پیشہ عناصر حیرت انگیز طور پر قانون نافذ کرنے والے اداروں کی نظروں سے اوجھل ہیں اور عام شہریوں کو اسنیپ چیکنگ کے دوران نہ صرف پریشان کیاجاتا ہے بلکہ یہ عمل بھی شہریوں کے لئے زحمت بن چکا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ شہریوں کو جرائم پیشہ عناصر سے تحفظ فراہم کرنا قانون نافذ کرنے والے اداروں کی بنیادی ذمہ داری ہے جس میں ان کی جانب سے مسلسل غفلت ، لاپروائی اور نااہلی کا مظاہرہ کیاجارہا ہے اور اب مستقل اسٹریٹ کرائمز کی وارداتوں کے باعث شہری یہ سمجھنے میں حق بجانب ہیں کہ انہیں جان بوجھ کر جرائم پیشہ عناصر کے رحم و کرم پر چھوڑدیا گیا ہے ۔ حق پرست ارکان سندھ اسمبلی کامران اختر اور ندیم راضی نے وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ سے مطالبہ کیا کہ کراچی میں اسٹریٹ کرائمز کی بڑھتی ہوئی وارداتوں پر قابو پانے کیلئے فی الفور مثبت اور ٹھوس اقدامات بروئے کار لائے جائیں اور جرائم پیشہ عناصر کو حاصل قانون نافذ کرنے والے اداروں کی سرپرستی کا عمل بند کراکر شہریوں کی جان و مال کا تحفظ ہر صورت یقینی بنایاجائے ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...