قومی احتساب بیورو نے مسعود احمد کو کرپشن کے الزام میں گرفتار کرلیا

قومی احتساب بیورو نے مسعود احمد کو کرپشن کے الزام میں گرفتار کرلیا

پشاور( سٹاف رپورٹر )قومی احتساب بیورو خیبر پختونخوانے انٹی ٹیررازم کورٹ راولپنڈی کے اہلکار اور شیخ پوراسلام آبادکے رہائشی مسعود احمد کو گرفتار کر لیا۔ مسعود احمدنے مبینہ طورپرمعصوم لوگوں کوجھانسہ دیکرانکے 231ملین روپے ہڑپ کرلئے ہیں۔تفصیلات کے مطابق قومی احتساب بیوروخیبرپختونخواکومذکورہ ملزم کیخلاف شکایات موصول ہوئیں جس کے بعدنیب حکام نے تحقیقات کاآغازکیا۔ملزم نے دیگرساتھیوں کی ملی بھگت سے جعلی کاغذات کے ذریعے اپنے آپ کواراضی کامالک ظاہرکرکے لوگوں سے لاکھوں ہڑپ کرلئے۔ یادرہے کہ قومی احتساب بیوروخیبرپختونخوانے مذکورہ کیس میں مہتاب علی قریشی،بوستان کان،سیداعجازحسین شاہ،ملک حبیب، عادل شوکت اورکئی دیگرملوث افرادکوگرفتارکیاہے۔اس موقع پرنیب حکام نے عوام الناس سے اپیل کی ہے کہ اگرمذکورہ کیس میں کسی کابھی ملزم کیخلاف دعویٰ ہوتومتعلقہ کاغذات کیساتھ نیب خیبرپختونخوامیں درخواست دے سکتے ہیں۔ملزم مسعوداحمدکی جسمانی ریمانڈحاصل کرنے کیلئے جلداسے احتساب عدالت کے سامنے پیش کیاجائیگا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر