پاکستان اور سعودی عرب کے ویزوں پر پابندی نہیں لگائی: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ

پاکستان اور سعودی عرب کے ویزوں پر پابندی نہیں لگائی: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ

واشنگٹن (ڈیلی پاکستان آن لائن ) امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا ہے کہ جن ممالک کے ویزوں پر پابندی عائد کی گئی ہے پاکستان کا شمار ان میں نہیں ہوتا ۔

ایکسپریس ٹریبیون کے مطابق عہدہ سنبھالنے کے بعدا پنے پہلے ٹی وی انٹرویو میں انکا کہنا تھا کہ پاکستان اور سعودی عرب ان ممالک میں شامل نہیں جن کے باشندوں کے ویزوں پر پابندی عائد کی گئی ہے تاہم ا ن ممالک کے باشندوں کو سخت جانچ پڑتا ل سے گزرنا ہو گا ۔

گیمبیا کے سابق وزیر داخلہ کو سوئٹزرلینڈ میں گرفتارکرلیا گیا

اے بی سی نیوز کے نمائندے نے امریکی صدر سے پاکستان ، افغانستان اور سعودی عرب کا حوالہ دیتے ہوئے سوال کیا کہ ہم ان ممالک کے افراد کو اپنے ملک میں داخلے کی کیوں اجازت دے رہے ہیں جس پر ڈونلڈ ٹرمپ نے جواب دیا کہ تم جلد دیکھو گے کہ ہم ہر معاملے میں جانچ پڑتال کو سخت کریں گے جس کا مطلب ہے واقع سخت اور اگر ہمیں کسی بھی مسئلے کا اندیشہ ہوا تو ہم لوگوں کواپنے ملک میں داخل نہیں ہونے دیں گے ۔

امریکی صدر نے مزید کہا کہ ہم مخصوص ممالک پر پابندی لگا رہے ہیں تاہم دیگر ممالک کیلئے ویزا پالیسی میں سخت چھانٹی ضرور کی جائے گی جس کے بعد امریکا میں داخل ہونا بہت مشکل ہو جائے گا ۔ ”اس وقت امریکا میں داخل ہونا بہت آسان ہے مگر ہم اس کو بہت ہی مشکل بنائیں گے کیونکہ میں ملک میں دہشتگردی نہیں چاہتا “۔تم نے دیکھا کہ سان برناردینو اور اردگرد کیا ہوا اور یہ بھی دیکھا ہو گا کہ ورلڈ ٹریڈ سینٹر میں کیا ہوا۔ آپ انہیں مثال کے طور پر لے سکتے ہیں۔

جرمنی میں پہلا دہشتگرد حملہ کرنے والی نابالغ طالبہ کو 6 سال قید کی سزا سنا دی گئی

ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا کہ بیشتر مسلم ملکوں کے باشندوں کے داخلے کو محدود کرنا ضروری ہے کیونکہ دنیا میں ہنگامہ برپا ہے ۔ انہوں نے اس پابندی کو مسلمانوں پر پابندی کے ساتھ جوڑنے کے  تاثر کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ ”یہ پابندی مسلمانوں پر نہیں بلکہ ان ممالک پر ہے جو دہشتگردی میں ملوث ہیں اور ایسے ممالک جن کے باشندے یہاں آکر ہمارے لیے شدید مسائل کا باعث بنتے ہیں “۔ کسی کے داخلے کی اجازت دئیے بغیر ہی ہمارے ملک میں بہت سے مسائل موجود ہیں۔

ایک سوال کے جوا ب میں انہوں نے کہا کہ یورپ نے لاکھوں لوگوں کو جرمنی اور دیگر دوسرے ملکوں میں داخلے کی اجازت دیکربہت بڑی غلطی کی اور اب ضرورت اس آمر کی ہے کہ اس معاملے پر غور کیا جائے کیونکہ وہاں جو کچھ ہو رہا ہے وہ بہت خطرناک ہے ۔

مزید : بین الاقوامی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...