اسمبلی میں بیٹھے ’’درباری ‘‘ کی وجہ سے ہنگامہ ہوا ، وزیراعظم اور ان کے پارٹی ممبران کیخلاف کبھی غلط زبان استعمال نہیں کی، کرپٹ کو چور کہنا گالی نہیں :عمران خان

اسمبلی میں بیٹھے ’’درباری ‘‘ کی وجہ سے ہنگامہ ہوا ، وزیراعظم اور ان کے ...

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ میں نے آج تک وزیراعظم نواز شریف اور ان کے پارٹی کے ممبران کے خلاف غلط زبان استعمال نہیں کی ، کرپٹ کو چور کہنا گالی نہیں ہے ، پارلیمنٹ میں درباری بٹھا دیا ہے جسکی وجہ سے قومی اسمبلی میں ہنگامہ ہوا،نواز

شریف پر کرپشن کے12کیسز ہیں ، وہ خوش قسمت رہے کہ ان کی جماعت بھی کرپٹ تھی ورنہ وہ نوازشریف کو کرپشن میں پکڑ لیتے ،شریفوں نے آصف زرداری سے زیادہ ملک کو نقصان پہنچایا ہے ، ملک تباہ ہو رہا ہے اور ملک کے تمام ادارے ان کیلئے کام کر رہے ہیں ۔

نجی ٹی وی چینل ’’سما نیوز ‘‘کو انٹرویو دیتے ہوئےعمران خان  نے کہا کہ جمہوریت میں وزیراعظم جوابدہ ہوتا ہے ، سابق برطانوی وزیراعظم ڈیوڈ کیمرون نے پانامہ انکشافات پر پارلیمنٹ میں آکر جواب دیا، لیکن  نوازشریف کو  حکومت نے این آراو دے کر 10سال کیلئے باہر بجھوادیا، میں نے آج تک ان کے خلاف غلط زبان استعمال نہیں کی۔ عمران خان نے کہا کہ نوازشریف کے خلاف آخری سانس تک جاؤں گا ،اسحاق ڈار نے اقرار کیا کہ نوازشریف کیلئے پیسہ باہر بھیجتا تھا،ایمنسٹی اسکیم سے حکومتی عہدیدار خود فائدہ اٹھاتے ہیں ، شہبازشریف نے شریفوں کو 5 شوگر ملیں لگانے کی اجازت دی اور  انہوں نے اجازت بھی  اُس جگہ دی جہاں مل نہیں لگ سکتی تھی۔انہوں نے کہا کہ نوازشریف اور حسنی مبارک میں کوئی فرق نہیں ، ملک کے سارے ادارے انہوں نے برباد کر دیے ہیں ، ملک تباہ ہورہا ہے اورتمام ادارے ان کے لئے کام کر رہے ہیں ، نیب میں صحیح آدمی لگایا جائے تو یہ پکڑے جائیں ، شریف خاندان کو نہیں پتا تھا اللہ کی پکڑ پانامہ کی صورت میں آنے والی ہے ، عدالت کہہ رہی ہے جن کے فلیٹس ہیں انہوں نے ثبوت نہیں دیے ،ملک کی پارلیمنٹ اور ادارے کسی کام کے نہیں ، تمام اداروں میں انہوں نے اپنے آدمی بٹھا دیے ہیں ۔

عمران خان نے کہا کہ پارلیمنٹ میں درباری بٹھا دیا ہے جسکی وجہ سے قومی اسمبلی میں ہنگامہ ہوا، نیب کے مطابق ملک میں دن کی کرپشن 12ارب ہے ، بڑی کرپشن کے خاتمے تک کرپشن ختم نہیں ہوسکتی ،جو ان کے اردگرد ہیں وہ کرپشن کر رہے ہیں ، اورنج ٹرین پر آڈٹ کریں اس پر کرپشن ہوگی ، پی ٹی آئی پہلی سیاسی جماعت ہے جس نے کرپشن کو بڑا ایشو بنایا ہے ۔انہوں نے کہا کہ پانامہ کیس میں جو فیصلہ آئے گا قبول کریں گے ، پانامہ کیس میں جو بھی فیصلہ آئے گا پاکستان کی جیت ہوگی ۔عمران خان نے کہا کہ میں پانامہ کیس الیکشن کے لئے نہیں بلکہ ملک کی بہتری کیلئے لڑ رہاہوں ،پہلی بار وزیراعظم کی تلاشی لی جا رہی ہے اور وزیراعظم قطری خط کے پیچھے چھپ رہے ہیں ، یہ تو ملک کے مستقبل پر زنجیریں ڈال رہے ہیں ، کرپشن کے خاتمے بغیر ملک کا مستقبل روشن نہیں ہوسکتا ۔

مزید : قومی /اہم خبریں

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...