جنوبی پنجاب صوبے سے مسائل کا حل ممکن ‘ یکم جولائی سے کام شروع

جنوبی پنجاب صوبے سے مسائل کا حل ممکن ‘ یکم جولائی سے کام شروع

چشتیاں(نمائندہ پاکستان)چیئرمین ایگز یکٹیو کونسل جنوبی پنجاب صوبہ چوہدری طاہر بشیر چیمہ نے کہا کہ وہ وقت دور نہیں جب اس خطے کے عوام کی قربانیاں رنگ لائیں گی اور ان کی خواہشوں کے مطابق جنوبی پنجاب صوبہ کے قیام کی صورت میں ان کے مسائل کا حل ممکن ہوسکے گا۔انہوں نے مزید کہا کہ جنوبی پنجاب کے لیے بااختیار سیکرٹریٹ اس سال یکم جولائی سے اپنے کام کا آغاز کردے(بقیہ نمبر38صفحہ12پر )

گا۔اس امر کا اظہار انہوں نے مظفر گڑھ سے تعلق رکھنے والے ممبران پارلیمنٹ کے اعزاز میں دئیے گئے ظہرانے سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ جس میں وزیرخوراک پنجاب سمیع اللہ چوہدری سمیت مظفر گڑھ سے ایم پی اے علمدار عباس قریشی، ایم پی اے سبطین شاہ، ایم پی اے مخدوم رضا بخاری، ایم پی اے سردار عون ڈوگر، ایم پی اے نوابزادہ منصور علی خان، ایم پی اے نوابزادہ گزین عباسی، ایم پی اے علی رضا اور ممبر سی ایم ٹاسک فورس ڈاکٹر وسیم لنگڑیال، میاں عاطف متیانہ نے شرکت کی۔صوبائیوزیرخوراک سمیع اللہ چوہدری نے اس موقع پر حاضرین کو جنوبی پنجاب صوبہ کے قیام کے حوالے سے حکومت کی کاوشوں سے آگاہ کیا اور مسرت کا اظہار کیا کہ انہیں عمران خان اور چوہدری طاہر بشیر چیمہ جیسی مخلص قیادت میسر ہے جن کی رہنمائی میں جلد عوام کو نئے صوبہ کی خوشخبری دی جائیگی۔ میٹنگ کے دوران جنوبی پنجاب کے عوام کے مسائل کے ساتھ ساتھ جنوبی پنجاب صوبہ کے قیام کے حوالے سے عوام اور ان رہنماؤں کے سوالات کے جواب بھی دیے گئے ۔

طاہر بشیر چیمہ

مزید : ملتان صفحہ آخر