جرمنی کے 4شہروں میں بھارت کی مسلم تعصب پسندی کیخلاف احتجاجی مظاہرے

جرمنی کے 4شہروں میں بھارت کی مسلم تعصب پسندی کیخلاف احتجاجی مظاہرے

  



نئی دہلی(این این آئی)بھارت کے متنازعہ شہریت قانون اور این آر سی کے خلاف احتجاجی مظاہروں کی لہر یورپ تک پہنچ گئی۔ بھارتی ٹی وی کے مطابق جرمنی میں پیدا ہونے والے بھارتی نژاد افراداپنے اہل خانہ کیلئے پریشان ہیں۔شہریوں نے مودی سرکار کے مسلم تعصب پسندی پر مشتمل جو نیا قانون منظور کیا ہے اس کیخلاف دارالحکومت برلن میں ایک احتجاجی ریلی نکالی گئی۔ اس احتجاجی مظاہرے میں شریک افراد نے بتایا کہ بھارت کے کثیرالثقافتی تشخص کو فسطائیت نقصان پہنچا رہی ہے۔علاوہ ازیں برلن میں پیدا ہونے والی ایک بھارتی طالبہ کیرتی نے کہاکہ نیشنل رجسٹر آف سٹیزنز (این آر سی) کے اثرات مذہبی امتیاز سے بڑھ کر ہو سکتے ہیں۔ بھارت میں ہندو قوم پسند حکومتی جماعت بی جے پی کے ان حالیہ اقدامات کے خلاف جرمنی کے بڑے شہر برلن، ہیمبرگ، فرینکفرٹ اور میونخ میں احتجاجی مظاہرے کیے گئے۔بھارت کے یوم جمہوریہ کے موقع پراتوارکو بھی برلن سمیت دیگر شہروں میں مظاہرے کیے گئے جبکہ یکم فروری کو جنیوا میں اقوام متحدہ کے ہیڈکوارٹرز کے سامنے بھی احتجاجی مظاہرے کیا جائے گا۔

جرمنی،مظاہرے

مزید : صفحہ آخر