فوڈ اینڈ ایگریکلچر آرگنائزیشن اور محکمہ لائیو سٹاک وڈیری ڈویلپمنٹ کے مابین مفاہمتی یادداشت پر دستخط

  فوڈ اینڈ ایگریکلچر آرگنائزیشن اور محکمہ لائیو سٹاک وڈیری ڈویلپمنٹ کے ...

  



پشاور (سٹاف رپورٹر)فوڈ اینڈ ایگریکلچر آرگنائزیشن اور محکمہ لائیو سٹاک و ڈیری ڈویلپمنٹ کے مابین فوڈ اینڈ ایگریکلچر آفس پشاور میں ایک مفاہمتی یاداشت پر دستخط کئے گئے جس کے تحت فوڈ اینڈ ایگریکلچر آرگنائزیشن آف یونائیٹڈ نیشن کی جانب ضم شدہ اضلاع کیلئے محکمہ لائیو سٹاک اینڈ ڈیری ڈویلیپمنٹ کو تقریباً چار کروڑ روپے کی لاگت سے بارہ ہزار سیمن حوالہ کئے گئے جسے محکمہ ضم شدہ اضلاع کے مویشی پال لوگوں میں مفت تقسیم کرے گا۔ مفاہمتی یاداشت کی تقریب میں ڈائریکٹر لائیو سٹاک ضم شدہ اضلاع ڈاکٹر عالم زیب،ایف اے او کے ڈپٹی کو آرڈینیٹر محمد اکرم، کو آرڈینیٹر ڈاکٹر اسلام،محکمہ لائیو سٹاک اور ایف اے او کے نمائندوں نے شرکت کی۔ واضح رہے کہ یہ سیمن(ویکسین) جو کہ ایک انتہائی تیزی سے اثر کے ساتھ مویشیوں کی پیداوار کو بڑھانے والی ویکسین ہے کو محکمہ لائیو سٹاک و ڈیری ڈویلپمنٹ یہ سیمن جو کہ مادہ جانور کی افزائش نسل کیلئے ہے کو ضم شدہ اضلاع کے مویشی پال لوگوں کو مفت فراہم کرے گا تاکہ اس ویکسین کے ذریعے وہ ضم شدہ اضلاع میں اس بیش قیمت ویکسین سے جانوروں کی پیداوار میں خاطر خواہ اضافہ کر کے نہ صرف اپنی بلکہ صوبے کی سطح پر گوشت اور دودھ کی پیداوار میں اضافہ کر سکتے ہیں۔تقریب میں محکمہ لائیو سٹاک اور آرگنائزیشن کے نمائندوں نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ چونکہ ضم شدہ اضلاع کے لوگوں کا زیادہ تر انحصار مویشیوں سے وابستہ ہے اسلئے وہ ان اضلاع کے لوگوں کی ترقی کیلئے خصوصی توجہ مرکوز کئے ہوئے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ اس ویکسین سے فائدہ اٹھاتے ہوئے ضم شدہ اضلاع کے لوگ اپنے لئے با عزت روز گار میں اضافے کے ساتھ ساتھ گوشت اور دودھ کی پیداوار میں اضافہ کر کے علاقے کی ضروریات کو پورا کرنے اور معیشت کو مستحکم کرنے میں اپنا فعال کر دار ادا کر سکتے ہیں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر