شانگلہ‘ برف جمنے سے نظام زندگی متاثر‘ ٹریفک کا نظام مفلوج

شانگلہ‘ برف جمنے سے نظام زندگی متاثر‘ ٹریفک کا نظام مفلوج

  



الپوری(آفتاب حسین)شا نگلہ مین شاہراہوں پر برف جمنے سے نظام زندگی متاثر، ٹریفک کی روانی میں شدید مشکلات کا سامنا۔وادی میں ٹھنڈ کاراج،خو ن جمانے والی سردی درجہ حرارت نقطہ انجماد سے گرگیا ہے شانگلہ بھراور بالائی علاقوں پہاڑی سلسلوں پر شدید برفباری کے نعد سردی کی شدت میں اضافہ ہوگی۔بالائی علاقوں کے لنک سڑکوں کی بندش سے وہاں معمولات زندگی مفلوج۔ مینسٹرکوں کے صحیح صفائی نہ ہونے کے بعدموسم صاف ہوتے ہی برف کی کنگل نے تہہ جمالی۔ لوگوں کی امد و رفت میں مشکلات بڑھ گئیں، گھنٹہ کا سفر گھنٹوں میں طے کرنا پڑتا ہے، سڑکوں کی صفائی درست نہ ہونے کی وجہ سے موسم صاف ہوتے ہی تمام رابطہ سڑکوں پر برف جم گئی، ضلعی انتظامیہ شانگلہ غائب۔ ماچاڑ ناغہ، شانگلہ ٹاپ، کروڑہ،رحیم آباد،دھیرئی غوربند،کنڈو چکیسرشا نگلہ ٹاپ تا خوازہ خیلہ سمیت ضلعی کی اندرونی سڑکیں منجمد رہی۔ان سٹرکوں صحیح صفائی نہ ہونے کے بعدموسم صاف ہوتے ہی برف کی کنگل نے تہہ جمالی۔ لوگوں کی امد و رفت میں مشکلات بڑھ گئیں، گھنٹہ کا سفر گھنٹوں میں طے کرنا پڑتا ہے، سڑکوں کی صفائی درست نہ ہونے کی وجہ سے تمام رابطہ سڑکوں پر برف جم گئی، ضلعی انتظامیہ شانگلہ غائب، کوئی محکمہ ٹھس سے مس نہیں ہورہا۔ شانگلہ کے عوام شدید مشکلات سے دوچار۔ شانگلہ میں ہونے والی شدید برفباری کے بعد تین ہفتے بعدسٹرکوں پر برف جمی رہی جس سے نظام زندگی میں مشکلات کا سامنا رہا۔ ضلعی انتظامیہ شانگلہ مسائل کے حل میں مکمل طور پر ناکام۔ انتظامی افسران غائب۔عوامی حلقوں سراپا احتجاج بن گئے۔ شانگلہ میں رابطہ سڑکوں پر برف کی کنگل جمنے سے ٹریفک روانی میں شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے جبکہ بیشتر بالائی علاقوں کے لنک سڑکوں کی بندش سے وہاں معمولات زندگی مفلوج ہوکر رہ گئی ہیں اور بالائی پہاڑی علاقوں میں اشیائے خوردنوش کی قلت شروع۔ سڑکوں کی بندش، بجلی کی ترسیل بند ہونے کے بعد اہلیان علاقہ منتخب نمائندوں اور انتظامیہ کے خلاف سراپا احتجاج بن گئے ہیں۔ شدید برفباری کا الرٹ جاری ہونے کے باوجود شانگلہ میں کوئی خاطر خواہ انتظامات نظر نہیں آئے، جس کی وجہ سے برفباری ہونے کے بعد نظام زندگی مکمل طور پر مفلوج نظر آرہی ہے، ضلع کے اندرونی رابطہ لنک سڑکیں تین ہفتے بعدبھی ٹریفک کے لئے نی کھل سکی۔۔

مزید : پشاورصفحہ آخر