نشتر میں آوارہ کتوں کا گشت‘ ڈاکٹر‘ ملازمین‘ مریض خوفزدہ

  نشتر میں آوارہ کتوں کا گشت‘ ڈاکٹر‘ ملازمین‘ مریض خوفزدہ

  



ملتان (وقائع نگار) نشتر ہسپتال میں اوارہ کتوں کی بھرمار نے سٹاف کالونی اور کوارٹروں میں رہائش پذیر ڈاکٹروں و ملازمین کا جینا دوبھر کردیا ہے۔جبکہ دوسری جانب محکمہ صحت کے پاس کتوں کو مارنے والا زہر نایاب ہوگیا ہے۔ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ نشتر ہسپتال کے اندر روزانہ کی بنیاد پر درجنوں کی تعداد میں کتے موجود ہوتے ہیں۔۔ ہسپتال کے اندر کتوں کے خول کی موجودگی پر وائس چانسلر میڈیکل یونیورسٹی پروفیسر ڈاکٹر مصطفے کمال پاشا اپنے انتظامی افسران پر بھڑک اٹھے ہیں۔اور فوری طور پر انکے(بقیہ نمبر39صفحہ12پر)

تدارک کیلئے احکامات جاری کیئے ہیں۔جبکہ نشتر انتظامیہ کی جانب سے محکمہ صحت ملتان سے رابطہ کیا گیا۔تو معلوم ہوا انکے پاس بھی کتوں مارنے کیلئے زیر دستیاب ہی نہیں ہے۔اور نہ ہی کتوں کو مارنے کیلئے شوٹر موجود ہیں۔اوارہ کتوں کا ہسپتال کے سٹاف کالونی و کوارٹر کے گردو نواح میں پھرنا مریضوں اور مکینوں کیلئے خطرے کی علامت ہے۔ذرائع کے مطابق نشتر میڈیکل یونیورسٹی کے وائس چانسلر کے گھر کچھ روز قبل آوارہ کتوں گھس آئے تھے۔جس پر انہوں نے ہسپتال انتظامیہ افسران پر برہمی کا اظہار کیا ہے۔نشتر ہسپتال انتظامیہ کے مطابق ہسپتال کے اندر اوارہ کتوں کی روک تھام کیلئے عملی اقدامات تیز کرنے کی ہدایت دی ہے

خوفزدہ

مزید : ملتان صفحہ آخر