الیکشن کمیشن کا معاملہ حل ہونے کا کریڈٹ پارلیمنٹ کوجاتا ہے،چیف جسٹس ہائیکورٹ اطہر من اللہ

الیکشن کمیشن کا معاملہ حل ہونے کا کریڈٹ پارلیمنٹ کوجاتا ہے،چیف جسٹس ...
الیکشن کمیشن کا معاملہ حل ہونے کا کریڈٹ پارلیمنٹ کوجاتا ہے،چیف جسٹس ہائیکورٹ اطہر من اللہ

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وفاقی حکومت نے الیکشن کمیشن کے دو ارکان کی تعیناتی سے متعلق رپورٹ اسلام آبادہائیکورٹ میں جمع کرا دی،چیف جسٹس اطہر من اللہ نے درخواست نمٹاتے ہوئے ریمارکس دیئے کہ الیکشن کمیشن کا معاملہ حل ہوگیا، یہ کریڈٹ پارلیمنٹ کوجاتا ہے، یہ کریڈٹ پارلیمنٹ کے ہر رکن کو جاتا ہے، عوام کو جاتا ہے،اس عدالت نے معاملے میں مداخلت نہیں کی، معاملہ پارلیمنٹ پرہی چھوڑا تھا، پارلیمنٹ کا وقار ہمیشہ مقدم رہنا چاہیے۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آبادہائیکورٹ میں الیکشن کمیشن کے 2 ارکان کی تعیناتی کے معاملے پر سماعت ہوئی،چیف جسٹس اطہر من اللہ کی سربراہی میں بنچ نے سماعت کی،وفاقی حکومت نے عدالتی احکامات پر عملدرآمد رپورٹ جمع کروا دی،وفاقی حکومت کی رپورٹ میں کہا گیاہے کہ عدالتی حکم پر رکن سندھ اور بلوچستان کی تعیناتی کردی گئی،سندھ سے نثار درانی اور بلوچستان سے شاہ محمد جتوئی کو رکن مقرر کردیا گیا، 24 جنوری کو صدر مملکت کی جانب سے نوٹی فکیشن جاری کیا گیا۔

چیف جسٹس اطہر من اللہ نے کہا کہ الیکشن کمیشن کا معاملہ حل ہوگیا، یہ کریڈٹ پارلیمنٹ کوجاتا ہے، یہ کریڈٹ پارلیمنٹ کے ہر رکن کو جاتا ہے، عوام کو جاتا ہے،اس عدالت نے معاملے میں مداخلت نہیں کی، معاملہ پارلیمنٹ پرہی چھوڑا تھا، پارلیمنٹ کا وقار ہمیشہ مقدم رہنا چاہیے۔

محسن شاہ نواز رانجھا نے کہا کہ ہم چاہتے ہیں مستقبل میں ایسے غیرآئینی اقدامات روکنے کیلئے عدالت احکامات جاری کرے، یہ درست ہے کہ آئین پارلیمان بناتی ہے لیکن آئین کی محافظ عدالتیں ہیں، چاہتے ہیں عدالت مستقبل کیلئے گائیڈ لائنز ضرور جاری کرے،حکومت کو ضرور سراہنا چاہوں گا کہ اس معاملے پرتعاون کیا اور بات سنی۔

چیف جسٹس اطہر من اللہ نے کہا کہ پارلیمنٹ میں کوئی اختلاف ہوتو بات چیت سے ہی حل ہونا چاہیے، پارلیمنٹ اورجمہوریت کی خوبصورتی یہی ہے مل بیٹھ کرمعاملات حل کریں،عدالت نے الیکشن کمیشن کے 2 ارکان کی تعیناتی کے معاملے پرن لیگ کی درخواست نمٹا دی۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد