چین کا شہر وہان جہاں سے خطرناک کرونا وائرس شروع ہوا، وہاں پھنسے پاکستانی طلبا کی ویڈیو سامنے آگئی، ایسی بات کہہ دی کہ دل ٹوٹ جائے 

چین کا شہر وہان جہاں سے خطرناک کرونا وائرس شروع ہوا، وہاں پھنسے پاکستانی ...
چین کا شہر وہان جہاں سے خطرناک کرونا وائرس شروع ہوا، وہاں پھنسے پاکستانی طلبا کی ویڈیو سامنے آگئی، ایسی بات کہہ دی کہ دل ٹوٹ جائے 

  



بیجنگ (ڈیلی پاکستان آن لائن) چین کے صوبے وہان میں خطرناک  کرونا وائرس نے کئی انسانی جانیں نگل لیں ، اس سے مزید ہلاکتوں کا خدشہ بھی ظاہر کیا جارہاہے جبکہ اس مرض کی ویکسین کی تیاری کیلئے چین نے کام شروع کردیا، اب اسی صوبے میں پھنسے پاکستانی طلبا کی ویڈیو بھی سامنے آگئی  جس میں انہوں نے کہا کہ دیگر ممالک اپنے شہریوں کو نکال رہے ہیں، حکومت پاکستان سے اپیل ہے کہ ہمیں بھی یہاں سے نکالنے کے انتظامات کریں۔ 

وہان یونیورسٹی کے سٹوڈنٹ عامر سہیل نے اپنے ویڈیو پیغام میں کہا کہ اس علاقے کو پہلے تو شاید کوئی نہیں جانتا تھا لیکن اب ہربندہ جان چکاہے، 2000 سے زائد مریضوں میں کرونا وائرس کی تصدیق ہوچکی ہے جبکہ 50سے زائد افراد موت کی وادی میں چلے گئے،  اسی شہر میں تین ہزار پاکستانیوں سمیت کئی غیرملکی رہتے ہیں، دوسرے ممالک نے انتظامات شروع کردیئے ، ہماری بھی حکومت پاکستان سے درخواست ہے کہ ہمیں نکالیں، یہ وائرس ابھی ابتدائی مراحل میں ہے اور خدشہ ظاہرکیا جارہاہے کہ مارچ تک یہ وائرس اپنے عروج پر ہوگا، اس سے پہلے کہ حالات بگڑ جائیں ، ہمیں اور دیگر پاکستانیوں کو یہاں سے نکالیں۔ 

کرونا وائرس کیسے پھیلتا ہے اور کس طرح محفوظ رہ سکتے ہیں؟ دیکھئے اس ویڈیو میں 

ایک اور طالبہ حفظہ اور حسن خان نےدیگر درجنوں طلبا کے ہمراہ ویڈیو پیغام میں کہا کہ یہاں خوراک کی کمی کا سامنا کرنا پڑرہاہے ،  جلد ایسا بھی ہوسکتا ہے کہ ہمارے پاس کھانے کو کچھ نہ ہو، ہمیں ایک جگہ پر بند کردیا گیا، اس صوبے کو بھی پورے چین سے عملی طورپر الگ کردیاگیا، حکام بالا سے درخواست ہے کہ انسانیت کی خاطرہمارے لیے کچھ کریں۔ایک اور طالبعلم نے بتایا کہ اس یونیورسٹی میں تقریباً 2 ہزار پاکستانی طلباہیں، ایک طرف کرونا وائرس کا خدشہ ہے تو دوسری طرف خوراک کی کمی ہے ۔ 

حفظہ نے گزارش کی کہ پاکستانی سٹوڈنٹس کو کسی بھی طرح سے نکالا جائے ، ہم  واپس زندہ سلامت اپنے ماں باپ کے پاس جانا چاہتے ہیں۔ 

مزید : اہم خبریں /قومی