جام کمال خود دلچسپی لیکر آئے اس پر انکے مشکور ہیں، سپریم کورٹ، ترقیاتی پروگرام پر عملدرآمد روکنے سے متعلق صوبائی حکومت کی اپیل سماعت کیلئے منظور

جام کمال خود دلچسپی لیکر آئے اس پر انکے مشکور ہیں، سپریم کورٹ، ترقیاتی ...
جام کمال خود دلچسپی لیکر آئے اس پر انکے مشکور ہیں، سپریم کورٹ، ترقیاتی پروگرام پر عملدرآمد روکنے سے متعلق صوبائی حکومت کی اپیل سماعت کیلئے منظور

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ نے سالانہ ترقیاتی پروگرام پر عملدرآمد روکنے سے متعلق بلوچستان حکومت کی اپیل سماعت کیلئے منظور کر لی اورہر ترقیاتی سکیم کیلئے 33فیصد بجٹ لازمی مختص کرنے کا ہائی کورٹ کا حکم معطل کردیا،جسٹس عمر عطا بندیال نے ریمارکس دیتے ہوئے کہاکہ عدالت کا کام قانونی مسائل کا حل نکالنا ہے،جام کمال خود دلچسپی لیکر آئے اس پر انکے مشکور ہیں۔

سپریم کورٹ میں بلوچستان کے سالانہ ترقیاتی پروگرام پر عملدرآمد روکنے سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی،وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال عدالت میں پیش ہوئے، جام کمال نے عدالت کو بتایاکہ ہر منصوبے کیلئے 33 فیصد رقم مختص کرنا ممکن نہیں،کوئٹہ کیلئے 30 ارب روپے کے ترقیاتی منصوبے منظورکئے ہیں، جسٹس عمر عطا بندیال نے کہاکہ عدالت کا کام قانونی مسائل کا حل نکالنا ہے،جام کمال خود دلچسپی لیکر آئے اس پر انکے مشکور ہیں۔

سپریم کورٹ نے بلوچستان حکومت کی اپیل سماعت کیلئے منظور کر لی اورہر ترقیاتی سکیم کیلئے 33فیصد بجٹ لازمی مختص کرنے کا ہائی کورٹ کا حکم معطل کردیا،حالیہ بجٹ میں منظور شدہ تمام سکیموں پر کام جاری رکھنے کی اجازت دیدی،عدالت نے اپوزیشن لیڈر بلوچستان اسمبلی سے پی سی ون کے بغیر منظور منصوبوں کی تفصیلات طلب کرلی اور بلوچستان حکومت کو تمام جاری منصوبوں کے پی سی ون پیش کرنے کا حکم دیدیا۔ سپریم کورٹ نے مزید سماعت غیر معینہ مدت تک ملتوی کردی۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -