کیا آپ کی شادی ختم ہونے والی ہے؟ ماہر نفسیات نے معلوم کرنے کا طریقہ بتادیا

کیا آپ کی شادی ختم ہونے والی ہے؟ ماہر نفسیات نے معلوم کرنے کا طریقہ بتادیا
کیا آپ کی شادی ختم ہونے والی ہے؟ ماہر نفسیات نے معلوم کرنے کا طریقہ بتادیا

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) میاں بیوی کی وہ کون سی عادات اور روئیے ہیں جو ان میں علیحدگی کے امکان میں اضافہ کرتے ہیں؟ بحث و مباحثے کی ویب سائٹ Redditپرگزشتہ دنوں یہ سوال ایک صارف کی طرف سے کیا گیا جس پر کئی ماہرین نے جوابات دیئے اور ہتک، تحکم پسندی اور استحصال سمیت کئی چیزوں کو شادی شدہ جوڑوں کی ازدواجی زندگی کے لیے خطرناک قرار دیا۔ میل آن لائن کے مطابق ایک ماہر نفسیات نے بتایا کہ ”جب میاں بیوی میں سے ایک شخص اپنی پسند و ناپسند کو معتبر گردانے اور دوسرے کی ترجیحات کی پروا نہ کرے، اس وقت ان کے ازدواجی تعلق کا خاتمہ قریب ہوتا ہے۔“ 

ایک اور ماہر نے لکھا کہ ”جب میاں بیوی میں سے ایک شخص دوسرے کو تبدیل کرنے پر تلا ہو اور خود اپنی جگہ سے نہ ہلے، ایسی صورت میں ان کا تعلق خطرے میں پڑ جاتا ہے اور گاہے نوبت طلاق تک پہنچ جاتی ہے۔ ایسے لوگ خود کو درست اور اپنے پارٹنر کو غلط خیال کر رہے ہوتے ہیں۔ “ایک ماہر نے بتایا کہ ”میاں بیوی میں سے کسی ایک کا یا سسرالیوں کا تحکم پسند ہونا اور میاں بیوی میں سے کسی ایک کی طرف سے دوسرے کی ہتک کیے جانا دو ایسے عوامل ہیں جو ازدواجی تعلق کے لیے زہرقاتل ثابت ہوتے ہیں۔ ایسی صورتحال کا نتیجہ اکثر اوقات طلاق کی صورت میں نکلتا ہے۔“ماہرین کے مطابق ایک شریک حیات کا دوسرے کی بات توجہ سے نہ سننا، جارح مزاج ہونا، برے ناموں سے پکارنا، جسمانی تشدد کرنا، ایک دوسرے سے اتنا لاتعلق ہو جانا کہ جیسے دونوں میں محبت کا رشتہ کبھی رہا ہی نہ ہو، وغیرہ بھی ایسے عوامل ہیں جو ازدواجی تعلق پر انتہائی منفی اثرات مرتب کرتے ہیں۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -