زائد المیعاد سٹنٹس کا استعمال ، ایف آئی اے کی ابتدائی رپورٹ میں تہلکہ خیز انکشاف

زائد المیعاد سٹنٹس کا استعمال ، ایف آئی اے کی ابتدائی رپورٹ میں تہلکہ خیز ...
زائد المیعاد سٹنٹس کا استعمال ، ایف آئی اے کی ابتدائی رپورٹ میں تہلکہ خیز انکشاف

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) وفاقی تحقیقاتی ایجنسی ( ایف آئی اے )نے زائد المیعاد سٹنٹس کے استعمال کے حوالے سے ابتدائی رپورٹ تیار کر لی،پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی(پی آئی سی) میں گزشتہ سال 39 زائد المیعاد سٹنٹس 38 مریضوں کو لگائے گئے۔

 نجی ٹی وی نے ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ تیار کی گئی ابتدائی رپورٹ کے مطابق500 سٹنٹس 2019ء میں نجی کمپنی سے خریدے گئے،سٹنٹس صرف 2020ء تک لگائے جانے تھے لیکن 39 سٹنٹس 19 ماہ بعد لگائے گئے۔

رپورٹ کے مطابق پی آئی سی کے پاس سٹنٹس موجود تھے پھر بھی دوسرے ہسپتالوں سے ڈیمانڈ کرتے رہے،معاملے میں بدنیتی کا عنصر واضح نظر آتا ہے۔ رپورٹ کے مطابق ملوث ڈاکٹرز اور دوسر ے افراد کو طلب کرکے مزید انکوائری کی جائے گی ،لوگوں کی صحت کے ساتھ قومی خزانے کو بھی نقصان پہنچایا گیا۔ 

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -