حکومت نے ڈھیل کے بدلے پیپلز پارٹی سے ڈیل کر لی،الطافشاہد

حکومت نے ڈھیل کے بدلے پیپلز پارٹی سے ڈیل کر لی،الطافشاہد

لاہور(پ ر) آل پاکستان مسلم لیگ برطانیہ کے مرکزی صدر چودھری محمدالطاف شاہدنے کہا ہے کہ نوازحکومت نے ڈھیل کے بدلے پیپلزپارٹی سے ڈیل کرلی ،اس معاہدے کے تحت دونوں پارٹیاں ایک دوسرے کوپانچ سال تک برداشت کریں گی اورایک دوسرے کی حکومت کیخلاف کسی اتحادیااحتجاجی تحریک میں شامل نہیں ہوں گی جمہوریت کومذاق بنانیوالی دونوں پارٹیاں میثاق جمہوریت پرکاربند ہیںپیپلزپارٹی کے کسی رہنما کااحتساب ہوگااورنہ فرینڈلی اپوزیشن کی طرف سے نوازشریف حکومت کی مالی بدعنوانیوں کیخلاف آوازاٹھا ئی جائے گی۔

۔ اس ڈیل اورڈھیل کے تحت پیپلزپارٹی کے رہنماﺅں کونہ صرف کلین چٹ دے دی گئی بلکہ سابق صدرآصف زرداری کوامریکہ میں صدارتی اورسفارتی پروٹوکول بھی دیا گیا ۔جس بزدل سیاسی قیادت نے ریمنڈڈیوس اور دہشت گردوں کورہاکردیا ہواس سے کچھ بعید نہیں ہے ۔وہ ایک افطار ڈنر سے خطاب کررہے تھے۔ چودھری تبریز، اورھا چودھری ،پرویز نایاب زیدی ،نعیم عباس ،سیّدشان عابدی ،سیّدعلی جعفری ،عمران طاہررضوی،اورسیّدسلمان اکبرنے بھی خطاب کیا ۔چودھری محمدالطاف شاہد نے مزید کہا کہ وزیراعظم نوازشریف نے اپنے وزراءاورپارٹی عہدیداروں کوپرویزمشرف کیخلاف دشنام طرازی کا خصوصی ٹاسک دیا ۔ پرویزمشرف اپنی بیمار والدہ کی تیمارداری کیلئے بیرون ملک نہیں جاسکتے جبکہ وفاقی حکومت نے پچھلے دنوں مذاکرات کے نام پربیسیوں طالبان قیدیوں کوکسی عدالتی سماعت اور ضمانت کے بغیررہا کردیاتھا۔وزیراعظم نوازشریف عدلیہ کے اختیارات کس طرح استعمال کرسکتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ نااہل حکمرانوں نے کبھی اپنے کسی ایکشن کے ری ایکشن بارے نہیں سوچا۔حکمرانوں کااہم قومی ایشوزپرموقف ہرایک گھنٹے بعدبدل جاتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ جو نااہل حکمران خودبندگلی سے باہر نکلنا نہ چاہیں توکوئی دوسرا انہیں کس طرح نکالے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1