دنیا کے مَردوں پر نیا شوق سوار ہوگیا، انٹرنیٹ پر خواتین کو ایک ایسے شرمناک کام پر مجبور کرکے لاکھوں روپے لُٹانے لگے کہ جان کر آپ بھی حیران پریشان رہ جائیں گے

دنیا کے مَردوں پر نیا شوق سوار ہوگیا، انٹرنیٹ پر خواتین کو ایک ایسے شرمناک ...
دنیا کے مَردوں پر نیا شوق سوار ہوگیا، انٹرنیٹ پر خواتین کو ایک ایسے شرمناک کام پر مجبور کرکے لاکھوں روپے لُٹانے لگے کہ جان کر آپ بھی حیران پریشان رہ جائیں گے

  

ڈبلن (نیوز ڈیسک) آپ نے سٹریٹ فائٹنگ اور بل فائٹنگ جیسی چیزوں کے بارے میں تو سن رکھا ہوگا لیکن شمالی آئرلینڈ میں ایک نیا کھیل ”کیٹ فائٹنگ“ بے پناہ مقبولیت اختیار کر گیا ہے، جبکہ انٹرنیٹ کے زریعے دنیا بھر کے مرد اس شرمناک کھیل کے شوقین ہو گئے ہیں ۔

کیٹ فائٹنگ خواتین کی لڑائی ہے لیکن یہ خاص قسم کی لڑائی ہے جس میں شامل خواتین تقریباً نیم عریاں ہوتی ہیں اور جو معمولی لباس ان کے تن پر موجود ہوتا ہے وہ بھی لڑائی کے دوران تار تار ہوجاتا ہے۔ یہ کھیل شمالی آئرلینڈ میں اس قدر مقبول ہورہا ہے کہ کچھ بعید نہیں کہ یہ ان کا قومی کھیل ہی قرار پاجائے۔

اخبار دی مرر کی رپورٹ کے مطابق کیٹ فائٹنگ کے مقابلے بڑی تعداد میں منعقد ہورہے ہیں جس میں عموماً نوجوان، دلکش خواتین ایک دوسرے کے بال کھینچتی، لباس نوچتی اور ایک دوسرے کو زمین پر پٹختی نظر آتی ہیں۔ ان لڑائیوں کی ویڈیو بھی ریکارڈ کی جاتی ہے جسے انٹرنیٹ کی فحش ویب سائٹوں پر بیچا جاتا ہے، جبکہ ڈی وی ڈی کی صورت میں گاہکوں کو یہ ویڈیوز بیچی جاتی ہیں۔

دنیا کا واحد کھیل جس میں کچھ نہ کرنے والا کھلاڑی جیت جاتاہے

شمالی آئرلینڈ میں اس کھیل کی مقبولیت اس قدر بڑھ گئی ہے کہ اس میں حصہ لینے والی خواتین کو رقم کی ادائیگی بھی کی جاتی ہے۔ کیٹ فائٹنگ مقابلے میں شمولیت کا معاوضہ 150پاﺅنڈ (تقریباً 22 ہزار پاکستانی روپے) جبکہ جیتنے والی خاتون کو مزید 300 پاﺅنڈ تقریباً (تقریباً 45 ہزار پاکستانی روپے) دئیے جاتے ہیں۔ کیٹ فائٹنگ کی ویڈیوز پر مبنی ڈی وی ڈی 11 پاﺅنڈ (تقریباً 1600پاکستانی روپے) میں بیچی جارہی ہے۔

اس کھیل پر تنقید کرنے والوں کا کہنا ہے کہ نیم برہنہ خواتین ہوس پرس مردوں کے لئے جنسی تفریح پیش کر رہی ہیں لیکن اس کھیل کو فروغ دینے اور اس کے مقابلوں کا اہتمام کرنے والوں کا کہنا ہے کہ یہ محض ایک تفریح ہے اور اس کا جنسی معاملات سے کوئی تعلق نہیں ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -