کشمیریوں کا قتل عام انسانی حقوق کی بدتر ین پامالی ہے،عبدالغفار روپڑی

کشمیریوں کا قتل عام انسانی حقوق کی بدتر ین پامالی ہے،عبدالغفار روپڑی

  

لاہور(پ ر) کشمیریوں کا قتل عام انسانی حقوق کی پامالی کی بدترین مثال ہے۔اقوام متحدہ کشمیریوں سے استصوابِ رائے کا وعدہ وفا کرے۔ بھارت کے ظلم و ستم سے کشمیریوں کے جذبہ آزادی کو مزید تقویت مل رہی ہے۔مودی حکومت کے پاس اسلام دشمنی کے علاوہ کوئی ایجنڈا نہیں ان خیالات کا اظہار جماعت اہل حدیث پاکستان کے امیر حافظ عبدالغفار روپڑی نے گذشتہ روز جامعہ دارالقدس چوک دالگراں لاہور میں مشاورتی کونسل کے اجلاس کے دوران جماعتی ذمہ داران سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر میں ظلم و ستم کے پہاڑ توڑے جا رہے ہیں مگر بھارتی جارحیت کشمیریوں کے جذبے کو دبا نہیں سکتی۔ انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ میں استصواب رائے کی قرارداد کی منظوری کے باوجود بھارتی بربریت پر عالمی طاقتوں کی خاموشی تشویشانک ہے۔ ایک عالمی سازش کے تحت مسلمانوں کے گرد دائرہ حیات تنگ کیا جا رہا ہے۔ بھارت کو امریکہ اور اسرائیل کی مکمل حمایت حاصل ہے جس کے بل بوتے پر بے دریغ کشمیریوں کو گاجر مولی کی طرح کاٹا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارتی فوج کی جانب سے انسانی حقوق کی پامالی اور قوانین کی دھجیاں اڑانے پر عالمی برادری کی خاموشی قابل مذمت ہے۔ اقوام متحدہ اور عالمی قوتیں خاموش تماشائی کا کردار ادا کرنے کی بجائے مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے بھارت پر دباؤ بڑھائیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ انتہائی خطرناک صورتحال کے باوجود پاکستانی پرچموں سے کشمیری فضا کو مہکانے کا مطلب پوری دنیا پر واضح ہے۔ دنیا کا کوئی بھی مذہب انسانیت کے ناحق قتل اور اپنی طاقت مسلط کرنے کا درس نہیں دیتا۔ کشمیریوں سے پاکستان کا تعلق نظریاتی بنیادوں پر ہے۔ بھارت خطے میں اجارہ داری کا خواب دیکھنے کی بجائے خطے میں امن و سکون کی فضا کو یقینی بنانے میں تعاون کرے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -