بنگلہ دیش، ڈھاکہ کیفے پر حملے کے الزام میں 4عسکریت پسند خواتین گرفتار

بنگلہ دیش، ڈھاکہ کیفے پر حملے کے الزام میں 4عسکریت پسند خواتین گرفتار

  

ڈھاکہ(این این آئی)بنگلہ دیشی پولیس نے مقامی جنگجو تنظیم ’جماعت المجاہدین بنگلہ دیش‘ سے تعلق کے شبے میں چار خواتین کو حراست میں لے لیا ۔ اسی تنظیم پر الزام عائد کیا جاتا ہے کہ وہ یکم جولائی کو ڈھاکا کے ایک کیفے پر ہوئے حملے میں ملوث تھی۔فرانسیسی خبررساں ادارے کے مطابق مقامی کالعدم جنگجو گروہ ’جماعت المجاہدین بنگلہ دیش‘ سے تعلق کے شبے میں چار مشتبہ عسکریت پسند خواتین کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔ سراج گنج ضلع سے حراست میں لی گئی ان خواتین کی عمریں اٹھارہ اور تیس برس کے درمیان بتائی گئی ہیں۔پولیس نے اس یقین کا اظہار کیا ہے کہ یہ خواتین مسلح حملوں کی منصوبہ بندی کر رہی تھیں۔ ضلعی پولیس کے سربراہ سراج الدین نے میڈیا کو بتایا کہ مخبری پر ایک گھر پر چھاپہ مارا گیا، جہاں سے دستی بم بنانے کا مواد، خام بم اور جہادی لٹریچر بھی برآمد ہوا۔ بتایا گیا ہے کہ ان خواتین نے یہ گھر کرائے پر لے رکھا تھا۔پولیس کے مطابق ان خواتین سے تفتیش میں اس امکان کو بھی ملحوظ رکھا جائے گا کہ آیا وہ یکم جولائی کو ڈھاکا کے ایک کیفے میں ہوئے حملے کی منصوبہ بندی میں بھی ملوث تھیں۔

مزید :

عالمی منظر -