آزاد کشمیر، انتخابات، راولپنڈی کی مہاجر نشستیں بھی مسلم لیگ (ن) نے جیتیں!

آزاد کشمیر، انتخابات، راولپنڈی کی مہاجر نشستیں بھی مسلم لیگ (ن) نے جیتیں!

  

اسلام آباد سے ملک الیاس:

آزادکشمیر کے حالیہ الیکشن میں آزادکشمیر کے دیگر حلقوں کی طرح راولپنڈی اسلام آباد اور گردونواح میں کشمیری مہاجرین نے مسلم لیگ ن کے امیدواروں کو بھاری اکثریت سے کامیاب کرایا مہاجرین کے حلقہ جموں 6سے مسلم لیگ ن کے امیدوار راجہ محمد صدیق اور وادی4سے ن لیگی امیدوار حافظ احمد رضا قادری کامیاب ہوئے جنکی کامیابی پر مسلم لیگی کارکنوں نے رات گئے تک جشن منانے کا سلسلہ جاری رکھا ،تحریک انصاف کے چیئرمین کی جانب سے آزادکشمیر کے انتخابات کو تسلیم کرتے ہوئے مسلم لیگ ن کے قائد میاں محمد نوازشریف کو مبارکباد دینا سیاسی حلقوں کی جانب سے نیک شگون قراردیا گیا ہے اوراسے جمہوریت کیلئے بہترین اقدام قراردیا ہے ،پیپلز پارٹی نے انتخابات میں دھاندلی کا الزام لگاتے ہوئے اسے مسترد کردیا ہے ایک طرف تحریک انصاف کی قیادت نے انتخابات کو تسلیم کیا ہے تو دوسری طرف تحریک انصاف آزادکشمیر کے صدر بیرسٹر سلطان محمود چوہدری نے بھی انتخابات میں دھاندلی کاالزام لگاتے ہوئے اسے سوچی سمجھی پلاننگ قراردیا ہے اب دیکھنا یہ ہے کہ پیپلز پارٹی کے ساتھ ساتھ کیا تحریک انصاف بھی آزادکشمیر الیکشن کو بنیاد بنا کر کشمیر میں کوئی احتجاج کرتی ہے یا خاموش رہ کر اپنی ساری توجہ پاکستان کی سیاست پر مرکوز رکھتی ہے۔آزادکشمیر الیکشن کے بعد اب اگلا وزیراعظم کون ہوگا اس حوالے سے قیاس آرائیوں کا سلسلہ جاری ہے سابق وزیراعظم آزادکشمیر راجہ فاروق حیدر ،سابق سپیکر آزادکشمیر اسمبلی شاہ غلام قادراور مشتاق منہاس کے نام بھی متوقع وزیراعظم کے طور پر لیے جارہے ہیں لیکن حتمی فیصلہ وزیراعظم پاکستان محمدنوازشریف پارلیمانی پارٹی کے ممبران کی مشاورت کے بعد ہی کرینگے وفاقی وزیر امور کشمیر و گلگت بلتستان چوہدری محمد برجیس طاہر کااس حوالے سے موقف سامنے آیا ہے انکا کہناتھا کہ آزاد کشمیر کے لوگوں نے انتخابات میں مسلم لیگ (ن) کے حق میں فیصلہ دیتے ہوئے عمران خان اور بلاول بھٹو زرداری کی تضحیک آمیز تقاریر کو مسترد کردیا ہے، نئے قائد ایوان کا تقرر محمد نواز شریف پارلیمانی پارٹی کے ممبران کی مشاورت سے کریں گے، آزاد کشمیر میں پیپلز پارٹی کی حکومت کے زیر سایہ انتخابات منعقد ہوئے ہیں، تمام انتظامیہ پر وزیراعظم چوہدری عبدالمجید کا کنٹرول تھا۔انکا کہنا تھا کہ پاکستان محمد نواز شریف نے تمام عالمی فورمز پر مسئلہ کشمیر بھرپور انداز میں اٹھایا ہے۔ انہوں نے عالمی برادری پر زور دیا کہ وہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی جارحیت کا نوٹس لے، کشمیر کے مسئلہ کا حل اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق نکالا جانا چاہئے۔

بھارتی قابض مسلح افواج کی جانب سے مقبوضہ کشمیر میں کشمیریوں پر کیے جانیوالے مظالم کاسلسلہ جاری ہے اس حوالے پاکستان بھر میں کشمیریوں سے اظہاریکجہتی کیا جارہا ہے اسلام آباد راولپنڈی میں بھی بھارتی مظالم کیخلاف احتجاج اور کشمیریوں سے اظہاریکجہتی کیلئے ریلیاں منعقد کی گئی ہیں گزشتہ دنوں جماعت اسلامی کی جانب سے راولپنڈی لیاقت باغ سے اسلام آباد تک احتجاجی ریلی نکالی گئی جس کی قیادت امیرجماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق ،نائب امیر میاں محمد اسلم اور مقامی عہدیداران نے کی ریلی میں بڑی تعداد میں جماعت اسلامی کے کارکنان ودیگر لوگوں نے شرکت کی جس میں بھارتی مظالم اور اقوام عالم کی بے حسی کیخلاف شدید نعرے بازی کی گئی امیرجماعت اسلامی سراج الحق کا کہنا تھا کہ پاکستانی قوم جلد ازجلد کشمیر کوپاکستان کا حصہ اور کشمیری مسلمانوں کو بھارتی ظلم و جبر سے آزاددیکھنا چاہتی ہے جبکہ حکمران گزشتہ 70سال سے محض دعوؤں اور نعروں سے عوام کودھوکہ دے رہے ہیں۔کشمیر پر متفقہ قومی موقف اور پھر قومی ایکشن پلان کی طرح اس پر عمل درآمدسے ہی کشمیر کو بھارتی قبضے سے آزاد کروایا جاسکتا ہے۔کشمیر کا مسئلہ پاکستان کیلئے زندگی اور موت کا مسئلہ بن چکا ہے۔کشمیر کی آزادی تکمیل پاکستان کیلئے ضروری ہے،جماعت اسلامی 29جولائی کو کشمیر کے سلسلے میں ایک آل پارٹیز کانفرنس کا انعقاد بھی کررہی ہے جس کے دیگر جماعتوں کے قائدین کو شرکت کے دعوت نامے دیے جارہے ہیں۔

حکومتی کرپشن اور نیب کی جانب سے مبینہ طور پر غفلت برتنے اور کرپٹ لوگوں کو نہ پکڑنے کے خلاف تحریک انصاف کے زیراہتمام نیب ہیڈکوارٹر کے باہر احتجاجی مارچ کیا گیا جس میں مرکزی ایڈیشنل سیکرٹری جنرل پاکستان تحریک انصاف سیف اللہ خان نیازی سمیت تحریک انصاف اسلام آباد کی مقامی قیادت اوربڑی تعداد میں کارکنان نے شرکت کی۔ شریک کارکنان نے بینرز اور پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے جن پر حکمرانوں کی کرپشن کے خلاف نعرے درج تھے۔ اور مظاہرین ملک میں آزاد اور غیر جانبدارانہ احتساب کے حق میں نعرے بلند کر رہے تھے۔ کارکنان پر امن انداز میں نیب ہیڈ کوارٹر کے سامنے پہنچے چیئرمین نیب سے ملاقات کی اور باضابطہ ریفرنس جمع کروایا، اس موقع پر سیف اللہ نیازی کا احتجاجی مظاہر ین سے خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ پاکستان میں ہر روز 1200 کروڑ روپے کرپشن کی آگ میں جل کر راکھ ہو جاتے ہیں۔ پاکستان میں کرپشن اور لوٹ مار کی جتنی بھی داستانیں مشہور ہیں ان میں سے سب سے دلچسپ اور بڑی کہانی موجودہ حکمرانوں کی ہے۔ چین میں 16لاکھ کی کرپشن ثابت ہونے پر سزائے موت کی سزا سنائی جاتی ہے اور پاکستان میں کلین چٹ دے کر وزیر بنایا جاتا ہے۔ نیب پر کڑی تنقید کی کہ جب تک نیب پوری غیر جانبداری سے کام نہیں کرتی اس وقت تک پاکستان سے غربت, مہنگائی اور بیروزگاری جیسی لعنتوں کا خاتمہ ممکن نہیں ہے۔ نیب بتائے کہ آج تک اس نے کس بڑے مجرم کو پکڑا اور اسے کیا سزا دی گئی؟ جب تک نیب بیدار نہیں ہوتا ہم وقتا فوقتا اسے جھنجھوڑتے رہیں گے،نیب حکمرانوں کی کاسہ لیسی بند کرے اور قومی مجرموں کو کلین چٹیں دینے کے بجائے ان کا احتساب کرے اور کرپشن کے بڑے بڑے مقدمات کو آزاد اور غیر جانبدار انداز میں کاروائی کرتے ہوئے منطقی انجام تک پہنچائے۔اب دیکھنا یہ ہے کہ تحریک انصاف نے نیب کیخلاف مارچ کرکے اپنی احتجاجی تحریک کا آغاز کردیا ہے اب یہ سلسلہ آگے کیسے بڑھایا جاتا ہے کیا اس وقت پاکستان احتجاجی تحریکوں کا متحمل ہوسکتا ہے ۔

اس موقع پر کارکن سیلفی بنانے پر آپس میں الجھ پڑے۔ مکے بازی ہوئی اور میڈیا والوں کو بھی پیٹا گیا، اس پر احتجاج ہوا، عمران خان نے معذرت کی اور کارروائی کا اعلان کیا ہے۔

مزید :

ایڈیشن 1 -