کڈنی سنٹر ملتان کی نجکاری کیلئے معاملات طے پا گئے ‘ مزاحمت کرینگے ‘ ینگ ڈاکٹرز

کڈنی سنٹر ملتان کی نجکاری کیلئے معاملات طے پا گئے ‘ مزاحمت کرینگے ‘ ینگ ...

  

ملتان (وقائع نگار) کڈنی سنٹر کو حاصل کرنے کے خواہشمند نجی گروپ ملتان میں صحت کے دیگر منصوبوں پر بھی نظر رکھ لی زرائع کے مطابق کڈنی سنٹر کی نجکاری کیلئے اس گروپ اور پنجاب حکومت میں تمام معاملات طے پا گئے ہیں اور نجکاری کے مراحل مکمل کئے جا چکے ہیں ذرائع نے دعویٰ کیا ہے کہ نجی گروپ ملتان میں صحت کے دیگر منصوبوں اور ہسپتالوں کی نجکاری بھی خواہشمند ہے اور کڈنی سنٹر (بقیہ نمبر36صفحہ12پر )

کے بعد ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال، ریجنل بلڈ ٹرانسفیوثن سنٹر، شہباز شریف جنرل ہسپتال ، فاطمہ جناح خواتین ہسپتال کی نجکاری بھی چاہتا ہے اگر نجی گروپ صحت کے ان منصوبوں کو چلانے میں کامیاب ہو گیا تو پھر نشتر ہسپتال ،کارڈیالوجی ، چلڈرن کمپلیکس کی بھی نجکاری ہو سکتی ہے طبی حلقوں نے حکومت پنجاب سے ہسپتالوں و صحت کے منصوبوں کی نجکاری ختم کرنے کا مطالبہ کیا ہے دریں اثنا ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن ملتان کے عہدیداروں نے کہا ہے کہ کڈنی سنٹر کی نجکاری کیلئے ہر قسم کی مزاحمت کریں گے صحت کے اس منصوبے کو فروخت نہیں ہونے دیں گے وائی ڈی اے کی ایگزیکٹو کونسل کے چیئرمین ڈاکٹر حسن چاون نے کہا ہے کہ جنوبی پنجاب کے اس اہم ترین منصوبے کے فعال ہوتے ہی حکومت نے اس کو انڈس گروپ کو فروخت کرنے کی تیاریاں مکمل کرلی ہے انڈس گروپ کے حوالے ہونے سے گروپ کے مریضوں سے صحت کی مفت سہولت چھین لی جائے گی حکومت سنجیدگی سے اس منصوبے کو فعال کرے اس خطہ میں گردے کے مریضوں کی تعداد بہت زیادہ ہے جن کیلئے کڈنی سنٹر کسی نعمت سے کم نہیں ہے کڈنی سنٹر کو فروخت سے رکوانے کیلئے وائی ڈی اے میدان عمل میں آئے گی ۔ اس موقع پر ڈاکٹر فیصل عزیز ، ڈاکٹر عامر، ڈاکٹر سہیل ، ڈاکٹر ابوبکر ودیگر بھی شریک تھے انہوں نے کہا کہ کڈنی سنٹر کی نجکاری ودیگر بھی شریک تھے انہوں نے کہا کہ کڈنی سنٹر کی نجکاری کے خلاف بھرپور مزاحمت کرتے ہیں ۔

کڈنی سنٹر

مزید :

ملتان صفحہ آخر -