پانچ افراد کا قتل،پاکستان کی خبر پر آئی جی،ایس ایس پی کا نوٹس

پانچ افراد کا قتل،پاکستان کی خبر پر آئی جی،ایس ایس پی کا نوٹس

  

اسلام آباد (وحید ڈوگر سے )بنی گالہ پانچ افراد قتل کیس کے حوالے سے روزنامہ پاکستان کی خبر پر آئی جی اور ایس ایس پی اسلام آباد کا نوٹس ایس پی سٹی ایس ڈی پی او اور ایس ایچ او بنی گالہ کی سر زنش کرتے ہوئے ہوئے واقعہ کی ازسر نو تحقیقات کرتے ہوئے تین دن میں رپورٹ طلب کر لی معتبر ذرائع کے مطابق روزنامہ پاکستان میں 21جولائی 2016 کو بنی گالہ میں انسداد دہشت گردی کے کمانڈو اور خاتون وکیل ساڑھے چھے سالہ بچے سمیت پانچ افراد کو بے دردی سے فائرنگ کر کے قتل کر دیا گیا پولیس کی جانب سے ابتدائی طور پر بتایا گیا کہ پولیس اہلکار نے سب کو فائرنگ کرکے قتل کرنے کے بعد خودکشی کر لی ہے بعدازں اس حوالے سے پولیس کی ناقص تفتیش اور اس حوالے سے اٹھنے والے سوالات پر پولیس افسران کی جانب سے برہمی کا اظہار کیا اور آئی جی اسلام آباد طارق مسعود یاسین نے ایس ایس پی اسلام آباد سے رپورٹ طلب کر لی بعدازں ایس ایس پی اسلام آباد ساجد کیانی کی جانب سے ایس پی سٹی سمیت دیگر افسران سے رپورٹ طلب کرتے ہوئے تمام پہلووں سے دوبارہ تفتیش کرنے کا حکم دیا اس حوالے سے ذرائع کا مذید کہنا تھا کہ مقتول پولیس کمانڈو اور سوئی سدرن کے کنٹریکٹر کے ورثہ کی جانب سے کئی بار آئی جی اسلام آباد سے رابطہ کیا گیا لیکن آئی جی اسلام آباد کی جانب مبینہ طور پر کوئی نوٹس نہیں لیا گیا اس حوالے سے ایس ایس پی اسلام آباد ساجد کیانی نے روزنامہ پاکستان کے استفسار پر بتا یا کہ واقعہ کی تفتیش مراحل کا ازسر نو جائزہ لے گے حقائق کو منظر عام پر لایا جائے گا بچوں کے بیانات اور اب تک سامنے آنے والی تفتیش میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ پولیس اہلکار نے سب کو فائرنگ کر کے خود کشی کر لی ہے ایک سوال کے جواب میں ایس ایس پی اسلام آباد کا مذید کہنا تھا کہ اسلام آباد پولیس شہر کو سیف سٹی بنانے کی جانب گامزن ہے یعنی وجہ ہے کہ اب تک کرمینل کے منظم گینگ کے کئی اشتہاری ملزمان کو گرفتار کر لیا گیا

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -