بین الاقوامی صحافیوں نے اقتصادی راہداری منصوبہ کو عظیم فوائد کا حامل قرا ر دے دیا

بین الاقوامی صحافیوں نے اقتصادی راہداری منصوبہ کو عظیم فوائد کا حامل قرا ر ...
بین الاقوامی صحافیوں نے اقتصادی راہداری منصوبہ کو عظیم فوائد کا حامل قرا ر دے دیا

  

بیجنگ(آئی این پی )خطے کے ممالک سے تعلق رکھنے والے معروف میڈیا گروپس کے صحافیوں نے پاک چین اقتصادی راہداری منصوبہ کو عظیم فوائد کا حامل قرار دیا ہے۔ بیجنگ میں چینی اخبار پیپلز ڈیلی کی جانب سے ون بیلٹ ون روڈ منصوبہ سے متعلق منعقد کرائی جانے والی میڈیا کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے جنوبی ایشیا اور دیگر خظوں سے تعلق رکھنے والے صحافیوں نے اقتصادی راہداری منصوبہ کو خطے کی عوام کے لئے اہم پیش رفت قرار دیا جس سے بیش بہا معاشی فوائد حاصل کئے جا سکیں گے۔ راہداری منصوبہ علاقائی ممالک کو ایک دوسرے کو ریل اور سمندروں کے ذریعے منسلک کرنےکا ایک اہم قدم ہے۔یہ ون بیلٹ ون روڈ کا ایک اہم منصوبہ ہے اس لئے اس کی کامیابی کو یقینی بنایا جائے۔ صحافیوں نے خطے کے بہتر مستقبل کے لئے پاکستان اور چین کی قیادت کو خراج تحسین پیش کیا جو کہ مشترکہ طور پر منصوبے کی تکمیل کے لئے کام کر رہی ہیں۔ میڈیا کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے پاکستانی صحافیوں نے شرکا کو راہداری منصوبہ پر پیش رفت اور اس کے معاشرے پر پڑنے والے سماجی ومعاشی اثرات کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ دی۔ چینی صدر شی جن پنگ نے متعدد ممالک سے تعلق رکھنے والے میڈیا کے اداروں پر زوردیا کہ وہ ون بیلٹ ون روڈ منصوبوں کے فروغ کے حوالے سے مثبت کردار ادا کریں۔میڈیا کانفرنس کے نام اپنے ایک پیغام میں انہوں نے امید ظاہر کی کہ میڈیا فورم دنیا بھر کے صحافیوںکو ایک دوسرے کے ساتھ گفت وشنید کرنے اور عملی تعاون کے مواقع فراہم کرے گا۔میڈیا معلومات کے تبادلے میں اہم کردار ادا کرتے ہوئے باہمی اعتماد سازی اور اتفاق رائے کے فروغ کے حوالے سے اہم کردار ادا کرتا ہے۔ ریاستوں کے مابین تعلقات کو بہتر طریقے سے فروغ دینے کے لئے میڈیا مثبت کردار ادا کر رہا ہے جس کے ذریعے عوام کو بھی ایک دوسرے کو سمجھنے میں مدد ملتی ہے۔ بیلٹ اینڈ روڈ جامع مشاورت، مشترکہ عمل داری اور مساوی فوائد سے متعلق ہے جسے بیلٹ اینڈ روڈ سے منسلک ممالک نے بھی تسلیم کیا ہے۔ صدرشی نے اپنے پیغام میں بیلٹ اینڈ روڈ منصوبہ سے منسلک ممالک کی عوام کے لئے پر امن ،ذہین ، خوشگوار اور سرسبز وشاداب شاہراہ ریشم کی تعمیر کے لئے مشترکہ کاوشیں کرنے پر زوردیا۔

مزید :

بین الاقوامی -