ضلع ہری پور میں خواجہ سراؤں نے بے حیائی کوفروغ دینا شروع کر دیا

ضلع ہری پور میں خواجہ سراؤں نے بے حیائی کوفروغ دینا شروع کر دیا

ہری پور (نامہ نگار) ضلع ہری پور میں خواجہ سراؤں نے بے حیائی کوفروغ دینا شروع کر دیا نوجوان نسل تباہی کے دہانے پر پہنچنے لگی خواجہ سراؤں سے ڈیروں پر منشیات اُور غیر اخلاقی سرگرمیاں عروج پر پولیس انتظامیہ خاموش تماشائی تفصیلات کے مطابق ضلع ہری پور میں دور دراز شہروں سے آئے خواجہ سراؤں نے بے حیائی کو فروغ دینا شروع کر دیا زنانہ لباس پہن کر نوجوانوں کو اپنے طرف مائل کر کے دعوت گناہ کی پیشکش دیتے ہیں جس وجہ سے کئی گھروں کے شریف زادے اِن کے ہاتھوں لٹ چکے ہیں جبکہ اِنکے ڈیروں پر منشیات کا استعمال سرے عام ہوتا ہے کوئی پوچھنے والا نہیں ہے کیونکہ قانون کے کئی رکھوالے اِن ڈیروں کو پروٹوکول دیتے ہیں اہلیان ہری پور نے ضلعی انتظامیہ سے پُرزور مطالبہ کیا ہیکہ ضلع ہذا میں رہائش پذیر باہر سے آئے خواجہ سراؤں کو ضلع بدر کیا جائے زنانہ لباس پہن کر بازاروں میں اِنکا گھومنا منع کیا جائے ضلع ہذا میں رہائش پذیر تمام خواجہ سراؤں کا ریکارڈ اُور انٹری متعلقہ تھانے میں ہو اِنکے ڈیروں پر باہر سے آنے والوں کا بھی تھانے بھی ریکارڈ کروایا جائے خواہاں وہ مستقل آئیں ہیں یا ایک دِن کے لئے اِن کے ڈیروں پر غیر اخلاقی سرگرمیوں کا سختی سے نوٹس لیا جائے اُور پولیس اُور متعلقہ محکمہ جات گائے بگائے اِن ڈیروں کو جا کے چیک کیا کریں تاکہ اِن کے ڈیروں پر ہونے والی تمام حرکات و سکنات ضلعی انتظامیہ کے نوٹس میں ہو ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر