راجہ پور، عذر بداخلاقی کیس، وزیر اعلی کی آج ملتان آمد، پولیس مرکزی ملزم اشفاق اور حق نواز کو پکڑنے میں ناکام

راجہ پور، عذر بداخلاقی کیس، وزیر اعلی کی آج ملتان آمد، پولیس مرکزی ملزم ...

ملتان(وقائع نگار) تھانہ مظفر آباد کے علاقے موضع شیر شاہ بستی راجا پور میں 16 جولائی کو 12 سالہ شمیم گھاس کاٹنے گئی تو وہاں عمر وڈا نے اسے پکڑ کر زبردستی مبینہ بداخلاقی کا نشانہ بنا ڈالا، یہ بات اس نے اپنے گھر والوں کو بتائی تو 18 جولائی کو وہاں بھلر خاندان کی ایک پنچائیت منعقد ہوئی، جس میں سرپنچوں اور پنچائیتوں نے فیصلہ کیا کہ عمر وڈا کی 17 سالہ بہن عذرا بی بی کو بھی بدلے میں زیادتی کا نشانہ بنایا جائے ، پنچائیتوں کے فیصلے کے بعد عذرا بی بی کو وہاں پکڑ کر لایا گیا اور شمیم کے بھائی اشفاق نے پنچائیتی حکم پر عذرا بی بی کو زیادتی کا نشانہ بنایا،اس دوران عذرا بی بی اور اس کی والدہ ، بہنوں نے شور مچایا اور مزاحمت کی کوشش کی تو پنچائیتیوں نے اسلحہ نکال لیا ، اس پنچائیت کے بعد شمیم بی بی کے گھر والوں نے ویمن پولیس سنٹر میں زیادتی ہونے بارے مقدمہ نمبر 9/17 درج کرایا، یہ معاملہ جب عذرا بی بی کے اہلخانہ کو معلوم ہوا تو انہوں نے بھی ویمن پولیس سنٹر میں مقدمہ نمبر 10/17 درج کراویا، پولیس کو دوران تفتیش یہ معلوم ہوا کہ عذرا بی بی کو پنچائیت میں زیادتی کا نشانہ بنایا گیا ہے تو پولیس تھانہ مظفر آباد حرکت میں آ گئی، پولیس نے سر پنچ امین، آمنہ سعید پٹواری سمیت 20 افراد کو گرفتار کر لیا اور دیگر کی گرفتاری کے لیے چھاپے مارے جا رہے ہیں ، پولیس حکام نے یہ فیصلہ کیا ہے کہ پنچائیت کے حوالے سے ایک اور ایف آئی آر تھانہ مظفر آباد میں پولیس افسر کی مدعیت میں درج کی جائے گی ، روہی پر خبر چلنے کے بعد وزیر اعلی پنجاب میاں شہباز شریف نے نوٹس لے لیا، کمشنر ملتان بلال احمد بٹ اور ریجنل پولیس آفیسر سلطان اعطم تیموری بھی حرکت میں آگئی اور تھانہ مظفر آباد جا پہنچے، کمشنر ملتان اور آر پی او ملتان نے واقعہ کی تمام تفصیلات حاصل کرنے کے ساتھ ساتھ اب تک کی ہونے والی تفتیش اور گرفتاریوں پر بریفنگ بھی لی، پولیس وزیر اعلی کے نوٹس لینے کے باوجود مرکزی ملزمان اشفاق اور حق نواز کو گرفتار کرنے میں کامیاب نہیں ہو سکی ہے۔ دریں اثناء سائلہ کنیز مائی زوجہ خدا بخش نے تھانہ وومن پولیس اسٹیشن میں درخواست دی کہ میری بیٹی عذرا بی بی کو اشفاق وغیرہ 03 کس نے زبردستی اٹھا لیا اور پھر میری بیٹی عذرا کے ساتھ اشفاق احمد نے زیادتی کیا۔جس پر مقدمہ تھانہ وومن پولیس اسٹیشن درج ہوا۔ دورانِ تفتیش یہ انکشاف ہوا کہ یہ مقدمہ انتقامی کاروائی تھی کیونکہ اس سے پہلے اشفاق احمد ملزم کی بہن شمیم بی بی کے ساتھ عمر وڈا (عذرا کا بھائی ) نے زبردستی زیادتی کیا تھا مگر اس وقوعہ کی اطلاع پولیس کو نہ دی گئی تھی اور اپنے طور پر اہل علاقہ نے پنچایت مقرر کی اور پنچایت کے حکم پر عذرا بی بی کو دوسرے فریق حق نواز کے بیٹے محمد اشفاق کے حوالے کیا گیا جس نے پھر عذرا بی بی کے ساتھ زیادتی کر کے اپنی بہن شمیم بی بی کا بدلہ لیا۔اس پہلے وقوعہ کا مقدمہ حالات سامنے آنے پر وومن پولیس اسٹیشن شمیم بی بی کی والدہ بیگم مائی کی مدعیت میں درج کیا گیا ۔ان تمام حالات و واقعات کو مدِ نظر رکھتے ہوئے سی پی او ملتان کے حکم سے پنچائیتوں کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا۔ جس کے نتیجہ میں 20 کس ملزمان کی گرفتاری عمل میں لائی جا چکی ہے۔ بقایا ملزمان کی گرفتاری کے لئے ریڈ کئے جا رہے ہیں۔ اور انشاء اللہ بہت جلد بقایا ملزمان کی گرفتاری عمل میں لائی جائے گی.اور مقدمات کو اصل میرٹ پر یکسو کیا جائے گا۔ ذرائع کے مطابق وزیر اعلیٰ پنجاب میاں محمد شہباز شریف آج عذرا کیس کے سلسلے میں ملتان کا دورہ کریں گے۔ اس سلسلے میں پولیس و دیگر اداروں میں الرٹ رہنے کا حکم دے دیا گیا۔ پولیس افسران نے وزیر اعلیٰ پنجاب کی آمد کے پیش نظر پولیس ملازمین کی ڈیوٹی لگادیں۔ ٹریفک پلان بھی ترتیب دے دیا گیا ہے۔

مزید : ملتان صفحہ اول