ویلیو اسیسمنٹ میں فرق کے باعث امپورٹر دیگر شہر جانے لگے

ویلیو اسیسمنٹ میں فرق کے باعث امپورٹر دیگر شہر جانے لگے
 ویلیو اسیسمنٹ میں فرق کے باعث امپورٹر دیگر شہر جانے لگے

  

کراچی ( صباح نیوز) پاکستان کسٹمز کے ایئرفریٹ یونٹس میں درآمدی کنسائمنٹس کی یکساں شرح سے ویلیو اسیسمنٹ کے فقدان کے باعث درآمدکنندگان نے ایئرفریٹ یونٹ کراچی کے بجائے اسلام آباد، لاہور اور پشاور کے ایئرفریٹ یونٹس کارخ کرلیا ہے۔متاثرہ درآمدکنندگان نے بتایا کہ ایئرفریٹ یونٹ کراچی میں اسلام آباد لاہوراور پشاورکی نسبت زائد ویلیواسیسمنٹ اورکنسائمنٹس کی کلیئرنس میں تاخیری حربوں کے باعث ان کی مشکلات بڑھ گئی ہیں کیونکہ اسلام آباد، لاہور اور پشاور ایئرپورٹس پرکنسائمنٹس کی کلیئرنس کم ویلیومیں کی جارہی ہے یہی وجہ ہے کہ درآمدکنندگان کراچی کے بجائے اسلام آباد،لاہوراورپشاورایئرپورٹ سے اپنے کنسائمنٹس کی کلیئرنس کو ترجیح دے رہے ہیں۔

ذرائع نے بتایاکہ ایئرفریٹ یونٹ کراچی کی نسبت ملک کے دیگر ایئرپورٹس پرموبائل اسیسریزسمیت ہرقسم کے کنسائمنٹس کی کلیئرنس درآمدکنندہ کی جانب سے ظاہرکی جانے والی0.40 سینٹ تا 0.50سینٹ کی درآمدی ویلیو میں 20 تا 25 فیصد فریٹ شامل کرکے کی جارہی ہیں اوردرآمدی کنسائمنٹس کی ویلیوایشن رولنگ نہ ہونے پرمتعلقہ کسٹمز افسران درآمدکنندہ کی ظاہرکردہ درآمدی ویلیودرست نہ ہونے کی صورت میں اس کی ویلیو گزشتہ 90دن کے دوران کلیئرہونے والے ڈیٹا کے مطابق درست کی جاتی ہے لیکن مذکورہ ایئرپورٹس پر اس طریقہ کارکو نظراندازکرکے درآمدکنندگان کوفائدہ پہنچایا جارہا ہے جبکہ قانونی درآمدکنندگان کوکاروباری اورقومی خزانے کوریونیو کی مد میں خطیر نقصان پہنچایا جارہا ہے.

مزید : کراچی