کرپشن الزامات،سپین کے صدر ماری آنو راخوئی عدالت میں پیش،جمہوریت کو کوئی خطرہ لاحق نہیں ہوا

کرپشن الزامات،سپین کے صدر ماری آنو راخوئی عدالت میں پیش،جمہوریت کو کوئی ...
کرپشن الزامات،سپین کے صدر ماری آنو راخوئی عدالت میں پیش،جمہوریت کو کوئی خطرہ لاحق نہیں ہوا

  

بارسلونا(جی اے قریشی) سپین کے صدر ماری آنو راخوئی کرپشن الزامات پر گزشتہ روز عدالت میں پیش ہوئے اور2 گھنٹے تک ان سے پوچھ گچھ کی گئی مگر نہ تو جمہوریت خطرے میں پڑی اور نہ ہی کسی کی توہیں ہوئی۔ تفصیلات کے مطابق سپانش صدر اپنی پارٹی pp کی غیر قانونی فنڈنگ کے متعلق گرتیل کیس میں گزشتہ روز عدالت میں پیش ہوئے اور بغیر چوں چراں کئے عدالت میں 2 گھنٹے تک سوالات کے جوابات دیتے رہے اور پارٹی کے کرپشن کیس کے حوالے سے خود کو بری الزمہ قرار دیا اور ان الزامات کو رد کیا کہ اس سلسلے میں ذمہ دار ہیں۔اگرچہ یورپ میں یہ نارمل چیز ہے مگر یہاں پاکستان کی طرح نہ تو جمہوریت خطرے میں پڑی ہے اور نہ ہی انصاف بکنے کی آوازیں لگی ہیں۔واضع ہو کہ قبل ازیں سپین کے کئی سابقہ وزراء اور نائب صدر جیل کی ہوا کھا چکے ہیں اور کچھ کھا رہے ہیں۔عدلیہ اپنی ذمہ داری نبھا رہی ہے، اور کسی قسم کے سیاسی پریشر سے مبرا ہے۔کاش کہ ایسا پاکستان میں بھی ہو جائے۔عدلیہ آزاد ہو اور ججز بھی ججز والے فیصلے کریں۔

مزید : بین الاقوامی