سنیئر صحافی سلیم صافی نے نواز شریف اور چودھری نثار کے مابین دوریاں پیدا کرنیوالے کرداروں کے نام افشاں کردیئے

سنیئر صحافی سلیم صافی نے نواز شریف اور چودھری نثار کے مابین دوریاں پیدا ...
سنیئر صحافی سلیم صافی نے نواز شریف اور چودھری نثار کے مابین دوریاں پیدا کرنیوالے کرداروں کے نام افشاں کردیئے

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)سنیئر صحافی و اینکر پرسن سلیم صافی نے وزیر اعظم نواز شریف اور وزیر داخلہ چودھری نثار کے مابین دوریاں پیدا کرنے والے کرداروں کو افشاں کر دیا ، جن میں عرفان صدیقی ، خواجہ آصف ، مریم نواز اور احسن اقبال سر فہرست ہیں ، چودھر ی نثار وزیر اعظم کی پیشی پر بن بلائے گئے مگر وہ ڈرئیونگ سیٹ پر بیٹھ تو گئے لیکن انہیں گاڑی میں ہی بیٹھے چھوڑکر کسی نے وزیر اعظم کے کان میں بات کی اور انہیں گاڑی سے اتار کر تصویر بنائی گئی جسے سوشل میڈیا پر جاری کیا گیا ، وزیر اعظم کی گاڑی چلاتے ہوئے وزیر داخلہ کی فوٹیج بھی میڈیا سے غائب کروا دی گئی، جے آئی ٹی کے بعد وزیر اعظم کی تقریر عرفان صدیقی نے لکھی تھی مگر چودھر ی نثار کی اس میں رائے بھی نہیں لی گئی جو دوریاں پیدا ہونے کی وجہ بنی ۔

ان خیالات کا اظؓہار انہوں نے نجی ٹی وی جیونیوز سے چودھر ی نثار کی پریس کانفرنس پر تبصرہ کرتے ہوئے کیا ۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف کو چودھر ی نثار سے دور کرنے میں اہم کردار عرفان صدیقی نے ادا کیا ہے کیونکہ وہ وزیر اعظم ہاؤس میں فارغ ہیں کیونکہ ان کے پاس کوئی وزارت وغیرہ نہیں ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پارٹی اجلاسوں میں بلانے کے اختیارات مریم بی بی کے پاس ہیں اور انہیں عرفان صدیقی ، خواجہ آصف اور کچھ لوگوں نے اپنے نرغے میں لے رکھا ہے جس کے باعث مریم بی بی نے بھی انہیں اہم کردار ادا کیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ ایک اور کرداراحسن اقبال تھے جنہیں چودھری نثار پر اپنے حلقے کے دو لوگوں کو سزائے موت سے نہ بچانے کا رنج تھا لہذا انہوں نے بھی خوب سازشیں کیں اور معاملات اس نہج تک پہنچانے میں اہم کردار کیا۔ انہوں نے کہا کہ سب پر عیاں ہے کہ چودھر ی نثار اور خواجہ آصف کے آپس میں تعلقات کشیدہ رہتے ہیں ۔ سلیم صافی کا کہنا تھا کہ چودھر ی نثار انتہائی جرأت مند ، با کردار اور خودار آدمی ہیں اور اس طرح کا سلوک انہیں انتہائی اقدام اٹھانے پر مجبور کرنے کے لئےکافی تھا لیکن سازشیوں کو کامیابی نہیں مل سکی ہے مگر اس نہج پر لا نے میں کامیاب ہوئے ہیں ۔

انہوں نے کہا کہ چودھر ی نثار وزیر اعظم کی جے آئی ٹی میں پیشی کے موقع پر بن بلائے مہمان بنے اور وہ گاڑی چلانے کے لئے ڈرائیونگ سیٹ پر بیٹھ گئے تو وزیر اعظم بھی ان کے ساتھ ہو لئے مگر کسی نے آ کر کان میں کچھ کہا اور گاڑی سے اتار کر ایک فوٹو بنائی اور چودھر ی نثار کو گاڑی میں بیٹھے رہنے دیا اور فوٹو میں شریک نہ کیا جس سے یہ تاثر دینے کی کوشش کی گئی کہ وہ اس موقع پر شامل نہیں تھے، پھر میڈیا میں چودھر ی نثار کی گاڑی چلاتے ہوئے فوٹیج چلی جسے میڈیا سے غائب کر وادیا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نے چودھر ی نثار  کے بیمار ہونے  پر پھول بجھوائے تھے دونوں رہنماؤں کے آپس میں دیرینہ تعلقات ہیں اور ایک بات یاد رکھیں چودھر ی نثار کہیں بھی نہیں جا سکتے کیونکہ عمران کے ساتھ تو وہ چل ہی نہیں سکتے ۔

مزید : قومی