چند گھنٹے کی بارش نے کراچی کو "پانی پانی "کر دیا ،لوگوں کو شدید مشکلات کا سامنا 

چند گھنٹے کی بارش نے کراچی کو "پانی پانی "کر دیا ،لوگوں کو شدید مشکلات کا ...
چند گھنٹے کی بارش نے کراچی کو

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)کراچی کے مختلف علاقوں میں موسلادھار بارش سے ہر طرف پانی جمع ہو گیا ہے جبکہ موسلا دھار بارش کے بعد سڑکیں تالاب اور ندی نالوں کی شکل اختیار کرگئی ہیں،کرنٹ لگنے سے کئی افراد کے جاں بحق ہونے کی بھی اطلاعات ہیں جبکہ کئی علاقوں سے بجلی غائب ہو گئی ہے،کراچی میں تیز بارش کے بعد پاکستان رینجرز (سندھ) ٹریفک پولیس کیساتھ امدادی کاموں میں مصروف عمل ہے ۔

نجی ٹی وی کے مطابق شہر قائد میں چند گھنٹے کی بارش نے سندھ اور شہری حکومت کے تمام دعوؤں کا پول کھول کے رکھ دیا ہے،چند گھنٹے کی بارش نے پورے شہر کو "پانی پانی "کردیا ہے جس سے لوگوں کی مشکلات میں کئی گنا اضافہ ہو گیا ہے ،محکمہ موسمیات کے مطابق بارش کا سلسلہ کل تک جاری رہے گا۔کراچی میں مون سون کے تیسرے سپیل کے دوران مختلف علاقوں میں بارش پر شہریوں نےجہاں  سکھ کا سانس لیا ہے وہیں سندھ اور شہری حکومت کی کارکردگی کلا پول بھی کھل گیا ہے۔ سرجانی ٹاون، کلفٹن، بوٹ بیسن، گڈاپ، گارڈن، فیڈرل بی ایریا، جمشید روڈ میں تیز بارش ہوئی جس کے بعد یہ علاقے ندی نالوں کی شکل اختیار کر گئے۔ بارش کے بعد گلشن اقبال، لیاقت آباد، نارتھ کراچی کے علاوہ ناگن چورنگی، کریم آباد، لانڈھی اور بفرزون میں بجلی غائب ہو گئی۔ سہراب گوٹھ، ملیر، یونیورسٹی روڈ، لیاری میں بھی شہری بجلی کو ترستے رہے۔ کراچی میں بارش کے بعد نظام زندگی درہم برہم ہو گیا، شہر کی بیشتر شاہراہوں پر پانی جمع ہو گیا جس کے باعث ٹریفک کی روانی متاثر ہوئی اور شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا، اس دوران صوبائی اور شہری حکومت منظر نامے سے غائب نظر آئی۔گلستان جوہر کے علاقے میں بارش کے پانی میں سڑکوں پر اتنا پانی کھڑا ہو گیا ہے کہ کئی گاڑیاں پانی میں بہتی ہوئی دکھائی دیں۔دوسری طرف محکمہ موسمیات کے مطابق مون سون کا میانہ شدت کا سسٹم صوبے میں داخل ہو رہا ہے جس کے تحت بارش کے ساتھ تیز ہواوں اور گرج چمک کا امکان ہے، بارش کا سلسلہ کل تک جاری رہے گا جبکہ آندھی چلنا بھی متوقع ہے، کراچی کا موجودہ درجہ حرارت 33 ڈگری ہے۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -