ایک سال گزر گیا، عرفان صدیقی کیساتھ ناروا سلوک کی تحقیقات نہ ہوسکی

  ایک سال گزر گیا، عرفان صدیقی کیساتھ ناروا سلوک کی تحقیقات نہ ہوسکی

  

اسلام آباد(آن لائن) معروف دانشور، کالم نگار، استاد اور سابق وزیراعظم نوازشریف کے مشیر عرفان صدیقی کی گرفتاری، جیل میں ڈالنے اور ہتھکڑی لگانے والے افسوسناک وا قعہ کو پورا سال گزرگیا لیکن اس واقعے کی کوئی تحقیقات ہوئی نہ ذمہ داروں کا تعین کیاگیا،افسوسناک واقعہ گزشتہ برس26 اور 27 جولائی کی درمیانی شب پیش آیا تھا۔ وزیراعظم عمران خان، چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ، وزیرداخلہ بریگیڈئیر(ر) اعجاز شاہ، سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے اس کا شدید نوٹس لیااور حکومت نے واضح اعلان کیا کہ اس قابل مذمت واقعہ کی مکمل چھان بین کیلئے انکوائری کمیٹی بنائی جارہی ہے جو ذمہ داروں کا تعین کرکے انہیں سزا دے گی، لیکن کمیٹی بنی، نہ تحقیقات ہوئیں کہ ایک معزز استاد کیساتھ یہ سلوک کس کے حکم پر ہوا؟ نہ کسی ذمہ دار کا تعین ہوا، نہ محاسبہ؟ رابطہ کرنے پر متعلقہ انتظامیہ کے اہلکار کہتے ہیں اب یہ فائل داخل دفتر ہوگئی ہے۔

عرفان صدیقی

مزید :

صفحہ اول -