قانون سازی میں تاخیر سے سنگین صورتحال کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے: شاہ محمود قریشی

  قانون سازی میں تاخیر سے سنگین صورتحال کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے: شاہ محمود ...

  

اسلام آباد (این این آئی)قانو ن سازی کے معاملے پر اپوزیشن اور حکومت کے درمیان مذاکرات (آج)پیر ہونگے۔وزیر خارجہ کے مطابق ایف اے ٹی ایف سے متعلقہ 8 اور نیب سے متعلق ایک بل اپوزیشن ارکان کے حوالے کر دیا ہے،اپوزیشن اور حکومتی ارکان کی میٹنگ کی صدارت میں کر رہا ہوں،کرپشن فری پاکستان ہم سب کی ضرورت ہے، ہمیں مل کر کرپشن کا خاتمہ کرنا ہے، قانون سازی کیلئے اگر دیر کی گئی تو ہمیں سنگین صورتحال کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ انہوں نے توقع ظاہر کی کہ (آج)پیر کو اپوزیشن سے ہونے والے مذاکرات کے بہتر نتائج سامنے آئیں گے اور ہمیں قانون سازی میں مدد ملے گی۔ انہوں نے بتایاکہ پیر کی شام پانچ بجے میری اپوزیشن سے ملاقات ہوگی اور میں توقع رکھتا ہوں کہ ملکی مفاد میں ہم ایک پیج پر ہوں گے، ہم کیونکہ کرپشن فری پاکستان چاہتے ہیں اس لئے ہم کھلے دل کے ساتھ بات چیت کرنے کو تیار ہیں۔ وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے اپنے سعودی ہم منصب شہزادہ فیصل بن فرحان آل سعود سے ٹیلیفونک رابطہ کیا ہے جس میں کرونا وبائی صورتحال سمیت دو طرفہ باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔وزیر خارجہ نے اپنی اور وزیر اعظم عمران خان کی طرف سے سعودی عرب کے فرمانروا شاہ سلمان بن عبدالعزیز کی صحت کے حوالے سے خیریت دریافت کی۔سعودی وزیر خارجہ نے وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ شاہ سلمان بن عبدالعزیز پتے کی کامیاب سرجری کے بعد تیزی سے رو بصحت ہو رہے ہیں۔وزیر خارجہ نے اپنے سعودی ہم منصب کو بتایا کہ وزیر اعظم عمران خان کی طرف سے سمارٹ لاک ڈاؤن حکمت عملی کے سبب نہ صرف کرونا وائرس کے پھیلاؤ کی شرح کم ہوئی بلکہ شرح اموات میں بھی کافی حد تک کمی واقع ہوئی۔ سعودی وزیر خارجہ نے کہا کہ سعودی عرب میں بھی کرونا وبائی صورتحال بہتری کی جانب گامزن ہے۔ شاہ محمود قریشی نے حال ہی میں سعودی عرب کی دفاعی تنصیبات پر حوثی ملیشیا کی طرف سے کیے گئے میزائل حملوں کی شدید مذمت کرتے ہوئے پاکستان کی حکومت اور عوام کی جانب سے سعودی حکومت اور عوام کے ساتھ اظہار یکجہتی کیا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان سعودی عرب کی علاقائی سالمیت کے تحفظ کیلئے ہر ممکن تعاون جاری رکھے گا۔دونوں وزرائے خارجہ کے مابین امسال حج کی محدود ادائیگی اور اقوام متحدہ جنرل اسمبلی کے آئندہ اجلاس کے حوالے سے بھی تبادلہ خیال ہوا۔

شاہ محمود قر یشی

مزید :

صفحہ اول -