سیکریٹری صحت کی رپورٹ پر وزیراعلٰی کا ایکشن، ایم ایس سروسز ہسپتال عہدے سے فارغ

سیکریٹری صحت کی رپورٹ پر وزیراعلٰی کا ایکشن، ایم ایس سروسز ہسپتال عہدے سے ...

  

 لاہور(جنرل رپورٹر) وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے سروسز ہسپتال کے ایم ایس ڈاکٹر زاہد کوناقص کارکردگی پر عہدے سے ہٹا دیا ہے،وزیراعلی پنجاب نے یہ ایکشن سیکریٹری صحت محمد عامر جان کے سروسز ہسپتال کے دورہ کے دوران ایم ایس ڈاکٹر زاہد کی ناقص کارکردگی میڈیا پر رپورٹ ہونے کے بعد لیا۔ پرنسپل میڈیکل آفیسر ڈاکٹر محسن جواد صدیقی کو ایم ایس کا اضافی چارج دیدیا۔محکمہ صحت نے اس ضمن میں نوٹیفکیشن جاری کر دی ہے۔تفصیلات کے مطابق سیکریٹری سپیشلائزڈ ہیلتھ محمد عامر جان نے سروس ہسپتال میں اپنے دورے کی ابتدائی رپورٹ وزیراعلیٰ کو پیش کی، جس میں کہا گیا ہے کہ سروسز ہسپتال انتظامیہ انتظامی طور پر مریضوں کو ہر قسم کی سہولیات اور سینئر ڈاکٹرز کی موجودگی کو یقینی بنانے میں مکمل طور پر فیل نظر آتا ہے، پورے ہسپتال کی تباہی دیکھ کر کہا جاسکتا ہے کہ انتظامیہ کہیں نظر نہیں آتی۔سیکرٹری صحت نے انہیں بتایا کہ وہ صبح سویرے جب سروسز ہسپتال پہنچے تو ڈیوٹی اوقات شروع ہونے کے آدھے گھنٹے بعد بھی انتظامیہ کے بڑے افسران میڈیکل سپرنٹنڈنٹ سمیت ڈاکٹرز، سینئر رجسٹرارز ایمرجنسی اور انڈور سے غائب پائے گئے، سیکرٹری صحت صبح ساڑھے آٹھ بجے سروسز ہسپتال کے ایم ایس ڈاکٹر زاہد کے دفتر پہنچ گئے، ایم ایس کا پی اے موجود تھا مگر ایم ایس غیر حاضر پائے گئے، سیکرٹری ایم ایس کے انتظار میں ان کے دفتر میں بیٹھ گئے تاہم آدھے گھنٹے کی تاخیر سے ایم ایس آفس پہنچ گئے، سیکرٹری صحت نے وزیراعلیٰ کو بتایا کہ ہسپتال کی حالت قابل رحم ہے، آپریشن تھیٹرز کا برا حال ہے بلکہ اللہ کے سپرد ہیں۔

ایم ایس سروسز معطل 

مزید :

صفحہ اول -