آزاد کشمیر الیکشن، علی پور چٹھہ سے گرفتارلیگی رہنما اور کارکنان ضمانت پر رہا

    آزاد کشمیر الیکشن، علی پور چٹھہ سے گرفتارلیگی رہنما اور کارکنان ضمانت ...

  

 علی پور چٹھہ، وزیر آباد(نمائندہ پاکستان، نامہ نگاران، نمائندہ خصوصی) آزاد جموں وکشمیر الیکشن کے سلسلہ میں پی ٹی آئی (ن) لیگ کے مابین تصادم کے نتیجہ میں گرفتار لیگی رہنما و کارکنان ضمانتی مچلکوں پر رہا، کارکنان کی رہائی پر گل پاشی کی گئی۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز آزاد جموں وکشمیر الیکشن کے سلسلہ میں گورنمنٹ ہائی سکول کے انتخابی کیمپس میں پی ٹی آئی کے مقامی رہنما عمران یوسف گجراور ن لیگ کے مقامی رہنما عامر محمود رہاڑ ایڈووکیٹ کے مابین تلخ کلامی بعدازاں شدید جھگڑے کا موجب بن گئی جس پر تھانہ علی پور چٹھہ پولیس نے مسلم لیگ (ن) کے متعدد کارکنان گرفتار کر لیئے جس پر ڈپٹی سیکرٹری جنرل عطااللہ تارڑ،ایم این اے ڈاکٹر نثار احمد چیمہ،ایم پی اے عادل بخش چٹھہ،ضلعی صدر مستنصر گوندل و دیگر سینکڑوں کارکنان پولیس تھانہ علی پور چٹھہ پہنچ گئے جہاں مذکورہ کارکنان کی رہائی اور وقوعہ میں ملوث پی ٹی آئی کارکنان کے خلاف کاروائی پر زوردیا گیا اور تھانہ میں ہنگامی پریس کانفرنس طلب کرلی گئی اس پر ایس ایس پی انوسٹی گیشن اور بعدازاں ایس پی صدر نے موقع پر پہنچ کر تمام لیڈران و کارکنان کو تھانہ کی عمارت سے باہر نکال دیا جبکہ پیشہ وارانہ فرائض کی انجام دہی کیلئے وہاں پر موجود صحافیوں کو بھی دھکے دیئے گئے تشدد کا نشانہ بناتے ہوئے ان کے کیمرے بھی چھین لئے گئے جس پر تھانہ کے باہر مسلم لیگ ن کے اکابرین اور صحافیوں کی طرف سے احتجاجی دھرنا دیا گیا جس پر رات مذاکرات کے بعد مسلم لیگ ن کے عطااللہ تارڑ اور 50کس نامعلوم افراد کے خلاف مقدمہ درج کر کے حوالات بند کردیا گیا۔ ان کو اگلے روز جوڈیشل مجسٹریٹ کی عدالت میں پیش کیا گیا جہاں پر ان کو 30،30ہزار کے ضمانتی مچلکوں کے عوض رہا کردیا گیا۔ اس موقع پر کارکنان مسلم لیگ ن کی جانب سے گل پاشی کی گئی۔دوسری جانب صحافیوں کے ساتھ تشدد،غیراخلاقی رویہ رکھنے پر تاحال ایس ایچ او علی پور چٹھہ کے خلاف کوئی کاروائی نہیں کی جاسکی۔علی پورچٹھہ کی صحافی برادری سراپا احتجاج ہے۔ صحافیوں نے آر پی او گوجرانوالہ سے مطالبہ کیا ہے کہ اختیارات کا ناجائز استعمال کرنے والے پولیس افسران اور اہلکاروں کے خلاف فی الفورکارروائی عمل میں لائی جائے اورجبکہ صحافیوں کے ساتھ ہونیوالی زیادتی پر ڈی ایس پی وزیرآباد عرفان الحق سلہریا کا کہنا تھا کہ یہ سب انجانے میں ہوا ہے ہم اس پر باقاعدہ معذرت کرتے ہیں جبکہ شہر کی تمام تاجر و مذہبی جماعتوں نے صحافیوں کے ساتھ بھرپور یکجہتی کرتے ہوئے متعلقہ ایس ایچ او کو معطل کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

لیگی رہنما رہا

مزید :

صفحہ اول -