بنوں،ضلعی انتظامیہ اور علماء کرام میں مذاکرات کامیاب، قاضی مسجد کو مسمار کرنے کا فیصلہ مؤخر کردیا گیا

  بنوں،ضلعی انتظامیہ اور علماء کرام میں مذاکرات کامیاب، قاضی مسجد کو مسمار ...

  

بنوں (نمائندہ خصوصی)ضلعی انتظامیہ اور علماء کرام میں مذاکرات کامیاب ہوگئے قاضی مسجد کو مسمار کرنے کا فیصلہ مؤخر کردیا گیا تفصیلات کے مطابق ضلعی انتظامیہ کی جانب سے بنوں شہر میں تجاوزات مافیا،غیر قانونی الاٹمنٹ اور قبضہ مافیا سمیت سڑکوں کی کشادگی کیلئے اپریشن جاری ہے اس سلسلے میں ضلعی انتظامیہ کی جانب سے گذشتہ روز قاضی مسجد کی مسماری کیلئے دو گھنٹے کی مہلت دی گئی تھی لیکن علماء کرام اور قاضی مسجد ریلوے روڈ گیٹ کے مکینوں نے احتجاج کیا کہ ہم مسجد کسی صورت مسماری کیلئے حالی نہیں کریں گے کیونکہ یہ مسجد1941سے بنی ہے اور حال ہی میں عوام نے چندہ جمع کرکے اسکی خوبصورتی اور کشادگی پر تین کروڑ روپے خرچ کئے یہ مسجد نہ تو غیر قانونی قبضہ ہے اور نہ ہی تجاوزات کے زمرے میں آتی ہے نہ ہی اس سے کسی کو کوئی تکلیف ہے اگر ضلعی انتظامیہ پارک،پلازے اور فوڈ سٹریٹ بنارہی ہے تو مسجد بھی عوام کی ضرورت ہے جسکے بعد ڈپٹی کمشنر بنوں کیپٹن ریٹائرڈ محمد زبیر خان نیازی نے 19رکنی کمیٹی کے ساتھ کے ساتھ اپنے دفتر میں مذاکرات کئے اور مسجد ہذا کے امام مولانا یعقوب کے مطابق ڈپٹی کمشنر نے علماء کرام اور کمیٹی کے شرکاء کو یقین دہانی کرائی کہ ضلعی انتظامیہ فوری طور پر مسجد کو مسمار نہیں کریگی مکمل کوشش کریں گے کہ مسجد کو بچائیں لیکن اگر زیادہ مجبوری ہوئی تو متبادل جگہ پر مسجد تعمیر کریں گے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -