جمعیت کے کامیاب جلسہ سے اے این پی حواس باختہ ہوگئی،اسلم غوری

جمعیت کے کامیاب جلسہ سے اے این پی حواس باختہ ہوگئی،اسلم غوری

  

پشاور(سٹی رپورٹر)  جمعیت العلمائے اسلام کے مرکزی ترجمان اسلم غوری نے کہا ہے کہ  وزیرستان میں جے یو آئی کے کامیاب ترین جلسے سے عوامی نیشنل پارٹی کی قیادت  حواس باختہ ہوگئی ہے۔انضمام کے خوشنما نعرے کی آڑ میں پشتونوں کے حقوق پر ڈاکہ ڈالنے والے کس منہ سے پشتونوں کے حقوق کی بات کرتے ہیں۔اسٹیبلشمنٹ کے منظور نظر بلوچستان حکومت میں فائدے اٹھانے والی اے این پی نے کے پی میں بغیر تنخواہ کے اسٹیبلشمنٹ کی نوکری کے لئے درخواست دے رکھی ہے۔ وزیرستان میں جے یو آئی کے جلسے پر اے این پی قیادت کی تنقید کا جواب دیتے ہوئے جے یو آی ترجمان  نے کہا کہ بیس سالہ امریکی قبضے کے دوران اے این پی کی قیادت کو افغان قوم کی  مظلومیت یاد نہ آئی،آج جب امریکی وہاں سے شکست کھا کر جارہے ہیں تو ان کے پیٹ میں مروڑ اٹھ رہے ہیں۔ ایمل ولی خان کی سیاست نے اے این پی کو ولی باغ تک محدود کر دیا ہے، فی الحال انہیں قوم کی فکر کی بجائے اپنی فکر کھائے جارہی ہے۔بیگم نسیم ولی خان کی روح آج بھی اسفندیار،ایمل ولی خان اور میاں افتخار سے سوال کر رہی ہے کہ لاکھوں ڈالر لے کر کن قوتوں کے لئے کرایہ کے قاتل بننے کی خدمت سرانجام دی؟اسلم غوری نے کہا کہ جے یو آئی جس وقت قبائل کا مقدمہ لڑ رہی تھی تب اے این پی قبائل پر ہونے والے ڈرون حملوں پر خاموش رہنے کی تنخواہ وصول کر رہی تھی۔اے این پی کو اصل غم افغانستان سے امریکی انخلاء کا ہے۔ معلوم نہیں تھا کہ اشرف غنی سے زیادہ غم اسفندیار یار ولی کمپنی کو ہوگا۔ایمل ولی بھی بیرونی طاقتوں کو خوش کرکے آئندہ کے پی میں عمران خان کی طرح  سیلکٹڈ بننا چاہتے ہیں،جے یو آئی ایمل ولی کے اس خواب کو پورا نہیں ہونے دے گی۔مشرف کی خدمت میں عمران خان کی طرح اسفندیارولی بھی پیش پیش تھے، آنکھیں بند رکھنے سے حقائق نہیں بدلتے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -