امریکہ کا عراق میں جاری 18سالہ جنگی مشن رواں سال ختم کرنے کا اعلان

امریکہ کا عراق میں جاری 18سالہ جنگی مشن رواں سال ختم کرنے کا اعلان
امریکہ کا عراق میں جاری 18سالہ جنگی مشن رواں سال ختم کرنے کا اعلان

  

واشنگٹن (ڈیلی پاکستان آن لائن ) امریکہ کی جانب سے عراق میں جاری 18سالہ جنگی مشن کے اختتام اور اپنی فوجیں واپس بلانے کا اعلان کردیا گیا ۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے بی بی سی کے مطابق عراقی وزیر مصظفیٰ الکاظمی نے گزشتہ روز وائٹ ہاﺅس میں امریکی صدر جوبائیڈن سے ملاقات کی ہے۔ ملاقات میں امریکہ اور عراق کے درمیان تعلقات اور 18سالہ جنگی مشن کے حوالے سے گفتگو کی گئی۔

ملاقات کے بعد امریکی صدر جوبائیڈن نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مجھے لگتا ہے کہ اب عراق میں حالات ٹھیک ہورہے ہیں اور ہم نے فیصلہ کیا ہے کہ اس سال کے آخر اس جنگی مشن سے نکل جائیں گے لیکن داعش سے نمٹنے کے لئے عراقی فوج کی تربیت اور مدد جاری رکھیں گے۔

امریکی صدر نے مزید کہا کہ امریکہ عراق کی جمہوریت کو مستحکم کرنے کی حمایت کرتا ہے جس کے لیے اکتوبر میں انتخابات کو یقینی بنایا جائے گا، جبکہ دونوں ممالک سلامتی کے تعاون ، داعش کے خلاف مشترکہ لڑائی کے لئے بھی پرعزم رہیں گے۔

تجزیہ کاروں کے مطابق یہ اعلان امریکہ کی خارجہ پالیسی میں بڑی تبدیلیوں کی عکاسی کرتا ہے۔

مزید :

اہم خبریں -بین الاقوامی -