بن بیاہی ماں اپنی نومولود بچی قتل کرنے پر سزا سے بال بال بچ گئی 

بن بیاہی ماں اپنی نومولود بچی قتل کرنے پر سزا سے بال بال بچ گئی 
بن بیاہی ماں اپنی نومولود بچی قتل کرنے پر سزا سے بال بال بچ گئی 

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ میں ناجائز بچی کو جنم دیتے ہی موت کے گھاٹ اتار دینے والی سفاک لڑکی جیل کی سزا سے بچ گئی۔ ڈیلی میل کے مطابق اس 24سالہ لڑکی کا نام ببیتا رائے ہے جو کسی شخص کے ساتھ ناجائز تعلق کے نتیجے میں حاملہ ہو گئی اور اس نے رات کے اندھیرے میں برطانوی شہر ایلڈرشاٹ میں واقع ایک پارک میں ایک درخت کے نیچے بچی کو جنم دیا اور اس کا سر کچل کر اسے موت کے گھاٹ اتار دیا اور لاش وہیں جھاڑیوں میں پھینک کر چلی گئی۔

واردات کے چار روز بعد پارک میں کام کرنے والے ایک شخص نے بچی کی لاش دیکھ کر پولیس کو اطلاع دی۔ پولیس نے ببیتا رائے کو گرفتار کرکے ونچیسٹر کراﺅن کورٹ میں پیش کیا تھا جہاں ملزمہ کی طرف سے موقف اختیار کیا گیا کہ اس کی مشرقی معاشرتی اقدار میں بغیر شادی کے بچہ پیدا کرنا انتہائی معیوب سمجھا جاتا ہے اور اس نے عمر بھر کی شرمندگی سے بچنے کے لیے یہ جرم کیا۔ببیتا رائے دو سال اور 40دن زیرحراست رہی اور گزشتہ پیشی پر عدالت نے اسے بری کردیا۔ تاہم اسے 85پاﺅنڈ سٹیچوٹری چارجز ادا کرنے اور دو سالہ کمیونٹی آرڈر کا پابند کیا گیا ہے۔واضح رہے کہ ببیتا رائے نیپالی نژاد ہے۔

مزید :

برطانیہ -