8 جیل اہلکار نوکری سے برخاست ،5 معطل، درجنوں کو سزائیں

8 جیل اہلکار نوکری سے برخاست ،5 معطل، درجنوں کو سزائیں

لاہور (کرائم رپورٹر) ڈسٹرکٹ جیل لاہور میں کرپشن ،بے ضابطگی اور فرائض میں غفلت برتنے پر 8 اہلکاروں کو ملازمت سے برخاست، 5 کو معطل، اور درجنوں جیل ملازمین کو مختلف نوعیت کی دیگر سزائیں دی گئیں۔ جیل سپرنٹنڈنٹ چودھری اعجاز اصغر کے چارج لینے کے بعد معلوم ہوا کہ کیمپ جیل کی کوئی .... نہیں حالات کا جائزہ لینے کے بعد 24 جیل ملازمین کے خلاف محکمانہ سخت کارروائی عمل میں لائی گئی جن میں 8 جیل ملازمین عبدالشکور ،ذیشان صدیقی، علی رضا، کاشف ریاض، محمد قاسم، اصغر علی اور عاطف سیف کو کورس کے دوران غیر حاضری، غیر حاضری ڈیوٹی کے دوران ہونے پر ٹریننگ انسٹی ٹیوٹ سے غیر حاضری، قیدیوں حوالاتیوں کو غیر قانونی سہولیات رشوت لے کر مہیا کرنے جن میں خصوصاً کہ موبائل فونز، ....وغیرہ شامل ہے۔ کی وجہ سے نوکریوں سے فارغ کردیا گیا جبکہ دیگر 11 جیل ملازمین جن میں وقار صدیق عمران سرور 9558۔ محمد اعجاز پیٹی نمبر 8914، محمد ارشد 9303، محمد اشرف 9759، شاہد رسول9441،مزمل حسین ہیڈ وارڈ محمد آصف، محمد رمضان 8434، عظمت علی 8745 شامل ہے جن کی 40 یوم کی تنخواہ بند سے لے کر ایک سال تا دو سال کی ترقی ضبط کرنے کی سزا، کرپشن، غیر حاضری، ڈیوٹی غفلت، ڈیوٹی کے دوران سائل کی موٹرسائیکل چوری ہونے، حوالاتیوں قیدیوں سے رشوت لینے، پر دی گئیں۔ 5 جیل ملازمین جن میں امجد علی 8745، بلال بشیر، کامران اکرم، محمد اسلم پیٹی نمبر 7873 اور ہیڈ وارڈ صداقت علی کو ڈیوٹی میں غفلت پر ایک حوالاتی کی موت ہونے ڈیوٹی غیر حاضری ہفتہ وار جیل تلاشی کیلئے انکار کرنے پر انہیں معطل کیا گیا ان 24 ملازمین کو محکمانہ سزاﺅں کا سامنا کرنا پڑا جس سے دیگر جیل ملازمین نے اپنا قبلہ درست کرلیا۔

مزید : میٹروپولیٹن 1