ملک میں یکساں لوڈشیڈنگ تک میرا احتجاج جاری رہے گا ‘شہباز شریف

ملک میں یکساں لوڈشیڈنگ تک میرا احتجاج جاری رہے گا ‘شہباز شریف

لاہور(جنرل رپورٹر) وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ تاریخ کی بدترین لوڈشیڈنگ کے ذریعے پنجاب کے ساتھ ظالمانہ اور امتیازی سلوک پر ان کے احتجاج کو دنیا کی کوئی قوت نہیں روک سکتی، ایک بیان میں وزیر اعلیٰ نے کہا کہ میں نے ایوان وزیر اعلیٰ کے ائیر کنڈیشنڈ کمروں کی بجائے موسم کے گرم ترین دنوں میں مینار پاکستان کے میدان میں خیموں کے اندر اپنا دفتر قائم کرنے کا فیصلہ پوری طرح سوچ سمجھ کر کیا ہے اور میرا یہ احتجاج اس وقت تک جاری رہے گا جب تک ظالم حکمران پاکستان بھر میں یکساں لوڈشیڈنگ کا وعدہ پورا نہیں کرتے اور پنجاب کو اس بدترین لوڈشیڈنگ کے عذاب سے نجات نہیں مل جاتی، انہوں نے کہا کہ میں بارہ سے لے کر بیس گھنٹوں کی لوڈشیڈنگ کے مارے ہوئے اپنے عوام کمو اکیلا نہیں چھوڑ سکتا، وزیر اعلیٰ نے کہا کہ اسلام آباد کے محلات میں پر تعیش زندگی بسر کرنے والا حکمران ٹولہ لوڈشیڈنگ کے ہاتھوں عوام کی حالت زار کے بارے میں بدترین بے حسی کا مظاہرہ کر رہا ہے لیکن یہ صورتحال زیادہ دیر تک جاری نہیں رہ سکتی، علاوہ ازیں ٹینٹ آفس میں سائلین کی شکایات سننے کے دوران وزیراعلیٰ پنجاب محمدشہبازشریف نے کہا ہے کہ قانون کی بالادستی، انصاف کی فراہمی اور مظلوموں کی دادرسی کے بغیر کوئی معاشرہ پنپ نہیں سکتا- پولیس افسران عوامی شکایات کے ازالے اور حصول انصاف کے لئے آنے والے سائلین کے ساتھ شفقت سے پیش آئیں اور ان کے مسئلے کو ترجیحی بنیادوں پر حل کریں- انہوں نے خبردار کیا کہ جن اضلاع سے پولیس کے بارے میں عدم تعاون کی شکایات زیادہ آئیں وہاں کے پولیس افسران کے خلاف کارروائی عمل میں لائی جائے گی-گوجرانوالہ سے محمد ارشاد نے وزیراعلی کو بتایا کہ ایک سال قبل اس کی بیوی، 3 بچوں اور ایک بہن کو قتل کردیا گیا تھا لیکن وہ ابھی تک انصاف کا متلاشی ہے- وزیراعلی نے انسپکٹر جنرل پولیس کو ہدایت کی کہ وہ اس معاملے میں تاخیر کا جائزہ لے کر آئندہ جمعہ کو رپورٹ پیش کریں- اسی طرح قصور سے ظفر علی نے بتایا کہ اس کی 14 سالہ بیٹی کو بے دردی سے قتل کردیا گیا اور وہ مردہ حالت میں اسے کھیتوں میں ملی- اس نے کہا کہ پولیس تعاون نہیں کر رہی، مجھے انصاف چاہیئے- وزیراعلی نے انسپکٹر جنرل پولیس کو ہدایت کی کہ وہ خود قصور جائیں اور اس واقعہ کی مکمل رپورٹ دیں۔علاوہ ازیں سکولوں کی سطح پر جاری تعلیمی اصلاحات کے روڈ میپ پر عملدرآمد کے حوالے سے اعلیٰ سطحی کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے محمد شہبازشریف نے کہا ہے کہ ترقی یافتہ قوموں نے تعلیم کو زینہ بنا کر ترقی کی منازل طے کی ہیں- تعلیم ہی وہ واحد راستہ ہے جسے اپنا کر پاکستان سے غربت اور جہالت کے اندھیرے دو رکئے جاسکتے ہیں- انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت نے علم کی روشنی صوبے کے کونے کونے میں بکھیرنے کے لئے ٹھوس حکمت عملی اپنائی ہے- انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت ڈیفڈ، سیڈا اور عالمی بینک کے مابین فروغ تعلیم کے حوالے سے اشتراک خوش آئند ہے- صوبے میں جاری پنجاب سکول ریفارمز روڈ میپ کے مثبت نتائج برآمد ہو رہے ہیں- سکول کی سطح پر تعلیمی اصلاحات کے اس منظم پروگرام کے ذریعے معیاری تعلیم کی فراہمی کے ساتھ ساتھ طالب علموں کو دیگر سہولتیں بھی مہیا کی جارہی ہیں- وزیراعلی محمد شہباز شریف نے کہا کہ پنجاب حکومت نے فروغ تعلیم کو اپنی اولین ترجیح بنایا ہے، تعلیمی شعبے کی بہتری اور معیار تعلیم کو بہتر بنانے کے لئے انقلابی اقدامات کئے گئے ہیں۔ انہوں نے توا نائی کے بحران پر بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ لوڈشیڈنگ نے تعلیم سمیت تمام شعبوں کو بری طرح متاثر کیا ہے۔قبل ازیں برطانوی ماہر تعلیم سر مائیکل باربر نے سکول ریفارمز روڈ میپ پر عملدرآمد کے بارے میں بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ تعلیمی اصلاحات کے اس پروگرام کے حوالے سے پنجاب حکومت اور اس کی ٹیم کی کارکردگی شاندار رہی ہے- انہوں نے کہا کہ اساتذہ کی استعداد کاربڑھانے کے لئے بھی حکمت عملی مرتب کی گئی ہے۔ ٹریفک سسٹم کو بہتر بنانے کے حوالے سے اعلیٰ سطح کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے۔ محمدشہبازشریف نے کہا ہے کہ ٹریفک کا بہترین نظام مہذب معاشروں کی پہچان ہوتا ہے- کم سے کم قومی وسائل خرچ کرکے بہتر مینجمنٹ پلان کے ذریعے ٹریفک کے نظام کو بہتر بنایا جاسکتا ہے- انہوں نے کہا کہ شہریوں کو ٹریفک کے مسائل سے نجات دلانے کے لئے تمام ٹریفک مینجمنٹ ڈیپارٹمنٹس مربوط انداز میں کام کریں اور ٹریفک قوانین پر عملدرآمد کو ہر قیمت پر یقینی بنائیں- انہوں نے کہا کہ لوگوں کو حادثات سے محفوظ رکھنے کےلئے ڈرائیوروں، ٹریفک کنٹرول کرنے والے سٹاف کی تربیت اور شہریوں کو ٹریفک قوانین کے بارے آگاہی فراہم کرنا بھی بے حد ضروری ہے- انہوں نے کہا کہ صوبائی دارالحکومت میں سٹیٹ آف دی آرٹ ڈرائیونگ ٹریننگ سکول کے قیام کا جائزہ لیا جائے- وزیراعلی محمد شہباز شریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب حکومت ٹریفک کے نظام کو جدید خطوط پر استوار کرنے کے لئے اقدامات کر رہی ہے، اس مقصد کے لئے جدید انٹیلی جنٹ ٹریفک مینجمنٹ سسٹم متعارف کرایا جا رہا ہے جس سے شہریوںکو ریلیف ملے گا - انہوں نے کہا کہ ٹریفک سسٹم کو موثر بنانے کے لئے نتیجہ خیز اقدامات کی ضرورت ہے- ڈرائیونگ لائسنسوں کے اجراءکا ایسا موثر نظام ہونا چایئے کہ ناتجربہ کار افراد ڈرائیونگ لائسنس حاصل نہ کرسکیں- وزیراعلی نے ہوم سیکرٹری کی سربراہی میں ایک کمیٹی تشکیل دیتے ہوئے کہا کہ یہ کمیٹی ڈرائیونگ ٹریننگ سکول کے قیام، ٹریفک پولیس کے سروس سٹرکچر، ٹریفک سٹاف کی تربیت، ٹریفک نظام کی بہتری، ٹریفک قوانین پر عملدرآمد، ڈرائیونگ لائسنسوں کے اجرائ، گاڑیوں کے فٹنس سرٹیفکیٹس اور ٹریفک کے حوالے سے دیگر معاملات کا جائزہ لے کر مختصر اور طویل المدت اقدامات تجویز کرے جس کی روشنی میں آگے بڑھا جائے گا -علاوہ ازیں بھکر اور دریا خان کے مسلم لیگی کارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ پاکستان توانائی، دہشت گردی، غربت، بیروز گاری اور مہنگائی جیسے سنگین مسائل سے دو چار ہے، اسے اندرونی و بیرونی خطرات بھی درپیش ہیں، دشمن ملک کو عدم استحکام سے دو چار کرنے کے درپے ہیں اور پوری قوم کو مل کر وطن عزیز کو مشکلات سے نکال کر دنیا کی عظیم مملکت بنانا ہے، انہوں نے کہا کہ امیر اور غریب کے درمیان خلیج کے خاتمے، لوٹ کھسوٹ کے نظام کو دفن اور لوگوں کو ان کے حقوق دیک ہی پاکستان کو ترقی و خوشحالی کی منزل سے ہمکنار کیا جا سکتا ہے، انہوں نے کہا کہ گزشتہ چار سالوں میں بھکر میں کروڑوں روپے کی ترقیاتی سکیمیں مکمل کی گئی ہیں اور دریا خان میں اس سال دانش سکول بھی قائم کیا جا رہا ہے، وزیر اعلیٰ نے بھکر میں میڈیکل کالج، سرگودھا یونیورسٹی کے کیمپس کے قیام، دریا خان میں سیوریج سکیم، بچے اور بچیوں کے کالجوں کے لئے پانچ بسوں کی فراہمی کا بھی اعلان کیا۔

مزید : صفحہ اول


loading...