ومنتخب وزیر اعظم قوم و ملک کی درست سمت میں رہنمائی کریں‘بیرسٹر شازیہ انجم

ومنتخب وزیر اعظم قوم و ملک کی درست سمت میں رہنمائی کریں‘بیرسٹر شازیہ انجم

  

                         نلندن (بیورورپورٹ)اوورسیز وویمن ونگ برطانیہ کی صدر بیرسٹر شازیہ انجم نے کہا ہے کہ نومنتخب وزیر اعظم ماضی کا بدلہ لینے کی بجائے قوم و ملک کی درست سمت میں رہنمائی کریں درگزر کرنا اسلام کے بنیادی جزو میں شامل ہے اگر جنرل پرویز مشرف نے ماضی میں کوئی غلطی کی تو اسے اس بات کی سزا دینا غیر مناسب ہے غلطی پر غلطی کرنا کوئی عقل مندی کی نشانی نہیں بلکہ اس عمل سے پاکستان عالمی سطح پر دوست ممالک کی ہمدردیوں سے محروم ہو جائیگا انہوں نے کہا کہ اس وقت بھی سعودی عرب کے کہنے پر میاں نواز شریف کو سزا کاٹے بغیر ملک سے باہر بھیجا گیا تھا حکومت آرٹیکل 6کے نفاذ کی بجائے ملک کو درپیش چیلنجز کے خلاف موثر حکمت عملی اپنائے سابق صدر پرویز مشرف ایک محب وطن پاکستانی ہیں انکے دور میں حالات اس قدر خراب نہیں تھے جتنا اب ہیں بیرسٹر شازیہ انجم نے کہا کہ وزیر اعظم درگزر کرنے کا سبق حضرت علی رضی اللہ تعالی عنہ سے سیکھیں اور اس پنڈورا بکس کو کھولنے کی بجائے مفاہمت کی پالیسی اپنائیں جو لوگ انہیں پرویز مشرف کے خلاف کاروائی کی ترغیب دے رہے ہیں وہ دراصل پاکستان میں اداروں کا ٹکراﺅ چاہتے ہیں اور یہ ٹکراﺅ ماضی میں بھی جمہوری حکومت کی تباہی کا سبب بنا ماضی کے مارشل لاءکو نظر انداز کر کے صرف ایک شخص کو ٹارگٹ کرنا غیر مناسب ہے صرف آرٹیکل 6کے تحت کاروائی کرنے کے اعلان کے بعد پاکستانی معیشت نے ایک بڑی ہچکی لی اور سٹاک ایکسچینج میں ریکارڈ حد تک کمی واقع ہوئی انہوں نے کہا کہ خدا وند کریم نے میاں نواز شریف کو اس ملک کا وزیر اعظم بنایا ہے اسکی رضا کے بغیر کچھ بھی نہیں ہو سکتا ہم سب کا فرض ہے کہ ہم وقت کے حکمران کی عزت کریں مگر تنقید کرنا بھی ہر آزاد ملک کے ہر شہری کا حق ہے بہتر یہی ہے کہ نومنتخب حکومت اپنی ماضی کی تمام تر تلخیوں کو بھول کر ملک کی درست سمت متعین کریں بے روزگاری کا جن بے قابو ہو چکا ہے دہشت گردی عروج پر ہے کہیں سیاح ‘ کہیں میڈیکل کی طالبات ‘ اور کہیں ہائیکورٹ کے ججز پر خود کش حملے ہو رہے ہیں پاکستان عالمی سطح پر ان کاروائیوں کی وجہ سے اکیلا ہوتا جا رہا ہے معیشت تباہی کے دہانے پر ہے ان حالات میں حکمرانوں کو اعلی ظرفی کا مظاہرہ کر کے عالمی دنیا پر یہ آشکار کرنا چاہیے کہ ان کے دل اور ذہن بڑے وسیع ہیں ۔

مزید :

عالمی منظر -